ٹرین کے باتھ روم میں بیٹھ کرنوجوان کی ٹویٹ نے حکام میں تھرتھلی ڈال دی

ٹرین کے باتھ روم میں بیٹھ کرنوجوان کی ٹویٹ نے حکام میں تھرتھلی ڈال دی
 ٹرین کے باتھ روم میں بیٹھ کرنوجوان کی ٹویٹ نے حکام میں تھرتھلی ڈال دی

  

 لندن (نیوز ڈیسک) موبائل فون کی جدید ٹیکنالوجی اور سوشل میڈیا نے انسان کی زندگی تبدیل کر دی ہے لیکن ایک برطانوی لڑکے کی زندگی میں تو اس نے انقلاب ہی برپا کر دیا۔

16 سالہ ایڈم لندن سے ٹرین کے ذریعے سکاٹ لینڈ کے شہر گلاسگو جا رہا تھا اور دوران سفر اچانک پیٹ میں گڑ بڑ ہونے پر ٹوائلٹ گیا۔ ٹوائلٹ میں ضروری کارروائی کے بعد جب اس نے دیکھا کہ ”ٹوائلٹ پیپر“ کا نام و نشان نہیں تو اس کے ہوش اڑ گئے اور وہ شدید پریشان ہو گیا کہ اپنی صفائی کس طرح کرے۔ (اس ٹرین میں جسمانی صفائی کیلئے پانی کی سہولت نہ ہے اور صرف ٹوائلٹ پیپر استعمال کیا جاتا ہے)۔

وہ منفرد بیمار ی جو صرف دنیا کے چار خاندانوں کو ہے

اچانک اسے یاد آیا کہ اس کا موبائل فون اس کے پاس ہے اور وہ سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹوئٹر کا صارف بھی ہے۔ ایڈم نے فوری طور پر ریلوے کمپنی ”Virgin Trains“ کے نام ٹویٹ کی جس میں لکھا تھا، ”میں کافی بڑی مقدار میں فضلہ کر بیٹھا ہوں اور آپ کی ٹرین میں ٹوائلٹ پیپر نہیں ہے“۔ کمپنی نے فوری طور پر ایڈم کی ٹویٹ کا نوٹس لیا اور اس سے معلوم کیا کہ وہ کس ڈبے میں ہے۔ ایک خصوصی طور پر متعین کئے گئے افسر نے فوری کارروائی کرتے ہوئے مطلوبہ ٹوائلٹ میں صفائی والا پیپر بھجوایا۔ اس کے کچھ دیر بعد ہی ایڈم نے دوبارہ ایک ٹویٹ کے ذریعے ریل کمپنی کا شکریہ ادا کیا اور اپنے دوستوں کو آگاہ کیا کہ ٹوئٹر نے اس کی جان بچا لی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس