کہیں صبر کا پیمانہ لبریز نہ ہو جائے،کارکنوں کے ماورا عدالت قتل بند کئے جائیں: حیدر عباس رضوی

کہیں صبر کا پیمانہ لبریز نہ ہو جائے،کارکنوں کے ماورا عدالت قتل بند کئے جائیں: ...
کہیں صبر کا پیمانہ لبریز نہ ہو جائے،کارکنوں کے ماورا عدالت قتل بند کئے جائیں: حیدر عباس رضوی

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ کے مرکزی رہنماءحیدر عباس رضوی نے مطالبہ کیا ہے کہ پارٹی کارکنوں کے ماورا عدالت قتل بند کئے جائیں ، کہیں ایسا نہ ہو کہ عوام کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو جائے اور پولیس کیخلاف کوئی رد عمل سامنے آ ئے۔ میڈیا سے بات چیت میں انہوں نے آئی جی سندھ پولیس سے مطالبہ کیا کہ وہ متحدہ کے کارکنوں کو مارنے والے پولیس اہلکاروں کیخلاف کاروائی کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی پولیس ہمارے کارکنوں کو گرفتار کر کے بدلے میں رقوم کا مطالبہ کرتی ہے اور بھتہ مافیا چلا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے کارکن فراز عالم کو بدترین تشدد کر کے قتل کیا گیا اور اس سے قبل اس کو صرف عدالت پیش کرنے کیلئے ہی دو ہزار روپے وصول کئے گئے، ا س سے کہا گیا کہ اگر دس ہزار روپے ادا کرو تو دو روز کا جسمانی ریمانڈ نہیں لیں گے مگر پیسے نہ دیئے جانے پر اس کا ریمانڈ لے لیا گیا۔ ان کاکہنا تھا کہ پولیس افسران محمد ابراہیم اور منظور سولنگینے فراز احمد کی رہائی کے بدلے دس لاکھ روپے طلب کر رکھے تھے۔

کراچی :تھانے میں پولیس کے مبینہ تشدد سے ایک شخص جاں بحق ،ورثاءکا احتجاج ،تحقیقاتی کمیٹی قائم

ایم کیو ایم کے رہنماءنے کہا کہ مجھے اس جج پر حیرت ہے کہ جس کو ہمارے کارکن نے جسم پر تشدد کے نشانات دکھائے مگر اس نے پھر بھی دو روزہ جسمانی ریمانڈ دیا، اس کے بعد تشدد سے ہی اس کی ہلاکت ہوئی اور اب پولیس اس کے گھر والوں کو بھی دھمکا رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ فراز عالم پر کوئی پرانا مقدمہ نہیں تھا، اس کا کوئی پولیس ریکارڈ ہی نہیں تھا مگر اس کو گرفتار کر کے اس پر نامعلوم افراد کے نام کاٹی گئی ایف آئی آرز ڈال دی گئیں۔

اس موقع پر ہلاک کارکن کے ماموں نے بھی مڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ پولیس ایس ایس پی کی طرف سے ابتدائی طور پر ایک لاکھ اسی ہزارروپے کا مطالبہ کیا گیا تھا مگر ہم رقم ادا نہین کر پائے تو ہر روز رقم بڑھتی گئی اور آکر میں فراز کو مار ہی دیا گیا۔

مزید : قومی /اہم خبریں