امریکی FBI نے سابق سی آئی اے چیف کیخلاف کاروائی کی تجویز دیدی

امریکی FBI نے سابق سی آئی اے چیف کیخلاف کاروائی کی تجویز دیدی
امریکی FBI نے سابق سی آئی اے چیف کیخلاف کاروائی کی تجویز دیدی

  

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کے سابق سربراہ جنرل ڈیوڈ پیٹرئیس کے خلاف حساس معلومات اپنی محبوبہ کو فراہم کرنے پر قانونی کارروائی کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔ امریکی اخبار ”نیویارک ٹائمز“ کے مطابق ایف بی آئی اور جسٹس ڈیپارٹمنٹ نے جنرل پیٹرئیس پر لگائے گئے الزامات کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد اُن کے خلاف جرائم کے ارتکاب کے الزامات کے تحت کارروائی کی سفارش کردی ہے۔

ششی تھرواہلیہ قتل کیس،بھارت کا پاکستانی صحافی کو بھی شامل تفتیش کرنے کا منصوبہ

 پیٹرئیس کے خلاف 2012ءمیں یہ الزامات سامنے آئے کہ وہ اپنی سوانح عمری لکھنے والی خاتون پاﺅلا براڈویل کے ساتھ معاشقہ چلا رہے تھے جس کے دوران انہوں نے اپنے حساس ای میل تک پاﺅلا کو رسائی دیے رکھی۔ پاﺅلا کی ملاقات 60 سالہ جنرل سے اس وقت ہوئی جب وہ ہارورڈ یونیورسٹی میں ان کے متعلق ایک تحقیقاتی مقالہ لکھ رہی تھیں۔ بعد ازاں انہوں نے جنرل کی سوانح عمری بھی لکھی اور کہا جاتا ہے کہ اس دوران وہ ان کے ساتھ طویل ملاقاتیں علیحدگی میں کرتی رہیں اور سی آئی اے کی حساس ترین معلومات بھی اُن کی رسائی میں رہیں۔ جنرل پیٹرئیس نے الزامات سامنے آنے پر 2012ءمیں استعفیٰ دے دیا تھا۔

مزید : بین الاقوامی