پنجاب میں خواتین پر تشدد کے 7600واقعات لمحہ فکریہ ہیں،شاہینہ کوثر

پنجاب میں خواتین پر تشدد کے 7600واقعات لمحہ فکریہ ہیں،شاہینہ کوثر

  

لاہور( لیڈی رپورٹر) امنگ ڈویلپمنٹ فاؤ نڈیشن کی منیجرپروگرام شاہینہ کوثر نے کہا ہے کہ پنجاب میں خواتین پر تشدد کے 76سو واقعات حکومت کیلئے لمحہ فکر ہے ،روزانہ 6خواتین اغوا،4بد اخلاقی کا شکار جبکہ 6خودکشی کررہی ہیں،صوبے میں خواتین کے تحفظ کیلئے کام کرنے والوں کی کارکردگی سوالیہ نشان ہے،جبکہ لاہور جیسے شہر میں پاکستان بھر کے دیگر شہروں کی نصبت سب سے زیادہ واقعات رونما ہوئے ہیں ،ایک تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق پنجاب میں کم عمری کی شادیوں کے خلاف سختی سے ایکشن لیا جارہا ہے اس کے باوجود بھی 16لاکھ لڑکیوں کی کم عمری میں شادیاں ہوئی ہیں ،ایک سال میں مختلف واقعات میں 76خواتن کو زندہ جلا دیا گیا ہے،90خواتین پر تیزاب پھینکا گیا ہے،جبکہ اغواء کے واقعات میں گزشتہ سال کی نصبت پچاس فیصد اضافہ ہوا ہے۔

،150سے زائد لڑکیوں سے زیادتی کے واقعات سامنے آئے ہیں،جبکہ قانون نا فذ کرنے والوں اداروں کی طرف سے انصاف نہ ملنے کی وجہ سے خودکشیوں میں بھی اضافہ ہوا ہے،سول سوسائٹی پنجاب حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ سال کے آغاز سے ان واقعات کی روک تھام کیلئے عملی ادامات کیے جائیں تاکہ صوبے میں خواتین خود کو غیر محفوظ تصور نہ کریں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -