دہشتگردی کے خلاف اتحاد میں پاکستان کا بنیادی کردار ہے،طاہر محمود اشرفی

دہشتگردی کے خلاف اتحاد میں پاکستان کا بنیادی کردار ہے،طاہر محمود اشرفی

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)دہشت گردی ، انتہاء پسندی اور فرقہ وارانہ تشدد کے خاتمے کیلئے 34 ملکوں کے اتحاد میں پاکستان نے بنیادی کردار ادا کرنا ہے۔ داعش جیسے فتنوں کا مقابلہ امت مسلمہ اپنی وحدت سے ہی کر سکتی ہے ۔پاکستان میں سعودی عرب کے خلاف کسی کو محاذ نہیں بنانے دیں گے۔ یہ بات پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے قصور صابری ہال میں تمام مکاتب فکر کے علماء ، مشائخ ، وکلاء اور طلباء کے ہزاروں کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پر مولانا زاہد محمود قاسمی، مولانا عبد الکریم ندیم، مولانا اسد اللہ فاروق ، حافظ محمد امجد، مولانا عبد الحمید وٹو ، مولانا محمد مشتاق لاہوری ،مولانا عبد القیوم ،مولانا سعد رسول ، مولانا حسین احمد اعوان، مولانا اسلام الدین ، قاری عبد الحکیم اطہر ، قاری محمد زبیر زاہد، حافظ حبیب الرحمن اور مولانا رسال الدین نے بھی خطاب کیا۔حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ مذہبی قائدین کی کوششوں سے پاکستان میں فرقہ وارانہ تشدد میں کمی ہوئی ہے اور بین المسالک و بین المذاہب ہم آہنگی پیدا ہوئی ہے ۔بعض قوتیں پاکستان کے اندر مختلف مذاہب اور مختلف مسالک کے درمیان تصادم پیدا کرنا چاہتی ہیں لیکن ایسا نہیں ہونے دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اور ایران اپنے قوانین کے مطابق سزائیں دیتے ہیں ، کسی فرد ، جماعت یا گروہ کو پاکستان کے اندر سعودی عرب کے خلاف فضاء پیدا نہیں کرنے دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ قومی ایکشن پلان پر مکمل عملدرآمد ہونا چاہیے ۔پاکستان کے مدارس اور مساجد دین اسلام کی خدمت کر رہے ہیں اور قومی ایکشن پلان کے تحت مدارس میں ہونے والے سرچ آپریشن میں یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ مدارس امن کے گہوارے ہیں دہشت گردی کے نہیں۔ پاکستان علماء کونسل کے مرکزی سیکرٹری جنرل صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے کہا کہ پاکستان میں ایران سعودی عرب کے معاملہ پر تشدد کی فضا پیدا کرنے والے نہ پاکستان اور نہ ملت اسلامیہ کے دوست ہیں علماء کونسل محراب و منبر کے وارثوں کو تنہاء نہیں چھوڑے گی۔ علماء کونسل کے وائس چیئرمین مولانا عبد الکریم ندیم نے کہا کہ ملت اسلامیہ کے مظلوم مسلمانوں کے حقوق کیلئے آواز بلند کرنا پاکستان علماء کونسل کا مشن ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -