لاہور بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات، ووٹنگ کی شرح 60 فیصد رہی

لاہور بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات، ووٹنگ کی شرح 60 فیصد رہی

  

لاہور (نامہ نگار )15 ہزار620 رجسٹرڈ ووٹو ں کی حامل ایشیا کی سب سے بڑی لاہور بار ایسوسی ایشن کے سالانہ انتخابات کے موقع پر گزشتہ روز سیشن کورٹ میں میلے کا ساماں تھا، ہر طرف امیدواروں کے پوسٹرز، فلیکس، کیمپ آفس نمایاں تھے۔ وکلا اپنے اپنے نمائندوں کی کامیابی کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگایا۔الیکشن بورڈ نے سیشن کورٹ جوڈیشل کمپلیس میں پولنگ بوتھ قائم کئے۔ خواتین وکلاء کے لئے الگ بوتھ بنایا گیا۔خواتین ووٹرز کی تعداد ساڑھے تین ہزار کے قریب ہے۔ وکلاء کے الیکشن میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے۔ سیشن کورٹ میں سی سی ٹی وی کیمرے، واک تھرو گیٹ نصب کرنے کے علاوہ سیکورٹی اہلکاروں کو میٹل ڈٹیکٹردیئے گئے جبکہ انتظامیہ کے اعلیٰ افسران بھی نگر انی کرتے رہے۔الیکشن کمشن کی طرف سے امیدواروں اور انکے ووٹرز کو پر تکلف کھانا بھی کھلایا گیا۔ سیشن کورٹ میں ہونے والی پولنگ کا وقت 9 بجے صبح سے شام 5 بجے تک تھا مگر پولنگ دیر سے شروع ہوئی۔ ووٹنگ کی شرح 60 فیصد رہی۔سیشن کورٹ میں سارا دن میلے کا سماں رہا ۔بابا گراؤنڈ میں داخلے کے لئے ایک گیٹ استعمال کیا گیا باقی تمام اطراف سے گراؤنڈ کو بند کر دیا گیا۔ انتظامیہ نے سول سیکریٹریریٹ کے مین گیٹ کے آگے اسلام پورہ جانے والی روڈ کو بیرئیر لگا کر ہر قسم کی ٹر یفک کے لئے بند کر دیا جبکہ سیشن کورٹ کے باہر اسلام پورہ روڈ پر ووٹرز کے اندر جانے کے لئے واک تھرو گیٹ نصب کیا گیا جہاں سے وکلاکے علاوہ کسی بھی شخص کو داخل نہیں ہونے دیا گیا ۔سیشن کورٹ کے اندر کسی بھی امیدوار کے سپورٹر کو ووٹ مانگنے کی اجازت نہیں تھی جبکہ ووٹرز حضرات کو کسی بھی امیدوار کا بیج لگا کر سیشن کورٹ میں داخل نہ ہونے دیا گیا پولنگ انتہائی منظم ہوئی اور اس دوران کوئی ناخوشگوار واقعہ رونما نہیں ہوا ۔

مزید :

صفحہ آخر -