پٹھانکوٹ واقعہ کی سچای سامنے لائینگے: نواز شریف، پاکستان اور بھارت مذاکرات جاری رکھیں: امریکی وزیر خارجہ

پٹھانکوٹ واقعہ کی سچای سامنے لائینگے: نواز شریف، پاکستان اور بھارت مذاکرات ...

  

اسلام آباد (آن لائن،اے این این) وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پٹھان کوٹ واقعہ کی شفاف انداز میں تحقیقات کر رہے ہیں، سچ کو سامنے لایا جائے گا،پاکستان اپنی سرزمین کسی دوسرے ملک کیخلاف دہشتگردی کیلئے استعمال ہونے کی اجازت نہیں دیگا جبکہ امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ پٹھان کوٹ واقعے کے باوجود پاکستان اور بھارت مذاکرات کا سلسلہ جاری رکھیں۔میڈیارپورٹس کے مطابق گزشتہ روز امریکی وزیرخارجہ جان کیری نے وزیراعظم محمد نوازشریف کو ٹیلیفون کیا ہے جس میں دونوں رہنماؤں نے دوطرفہ تعلقات ، دہشت گردی کیخلاف جنگ اور پاک بھارت تعلقات سمیت اہم علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا ۔جان کیری نے وزیر اعظم کو بتایا کہ پاک بھارت مذاکرات خطے کے استحکام کیلئے ضروری ہیں۔انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے وزراء اعظم کا قائدانہ کردار بہت اہم ہے،جان کیری نے پٹھان کوٹ حملے کے باوجود پاک بھارت سیکرٹری خارجہ مذاکرات کا شیڈول تبدیل نہ ہونے کو سراہتے ہوئے کہا کہدہشتگرد پاک بھارت مذاکرات کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں مگردونوں ملکوں کو مذاکرات جاری رکھنے چاہئیں ۔جان کیری نے مشکل حالات میں وزیراعظم نوازشریف کے قائدانہ کردار کی بھی تعریف کی۔اس موقع وزیراعظم نوازشریف نے انہیں یقین دلایا کہ پٹھانکوٹ واقعہ کی شفاف انداز میں تحقیقات کر رہے ہیں اور سچ کو سامنے لایاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سرزمین سے دہشتگردی کا خاتمہ کر رہے ہیں،پاکستان کے تمام ادارے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے پرعزم ہیں،پاکستان اپنی سرزمین کسی دوسرے ملک کے خلاف دہشتگردی کے مقاصد کیلئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔

نوازشریف/جان کیری

لاہور(آئی این پی)مشیر خارجہ سر تاج عزیز نے کہا ہے کہ15جنوری کو پاک بھارت سیکرٹر ی خارجہ کی ملاقات طے ہے ،پٹھان کوٹ واقعے کی تحقیقات کر رہے ہیں اور پتہ چل جا ئیگا کہ اس سانحہ میں کون ملوث ہے۔ وہ گزشتہ روزاین سی اے میں ایک نمائش میں شرکت کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔مشیرخارجہ نے کہا کہ پا ک سعودی تعلقات اور دیگر امور پر منگل کو پارلیمنٹ کی خار جہ امور کمیٹی میں اراکین کو ان کیمر ہ بر یفنگ دی جائیگی ‘سعودی عرب اور ایران میں کشیدگی میں اضافہ ہو رہا ہے جب اس میں کچھ کمی ہوگی تو پھر یقیناًپاکستان دونوں ممالک کے درمیان ثالثی کا کردار اداکر یگا ‘فی الحال ہماری تر جیح ملک کے دفاعی اور سیکیورٹی مفادات کا تحفظ ہے تاکہ دونوں ممالک کی کشیدگی کے اثرات پاکستان پر نہ آئے،انہوں نے کہا کہ ایران اور سعودی عرب کی کشیدگی سے دہشت گردوں کا بھی فائدہ اٹھانے کا خدشہ موجود ہے کیونکہ دونوں ممالک کے تعلقات میں خرابی کو فر قہ واریت کا نام بھی دیا جا رہا ہے۔سر تاج عزیز نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ ایران اور سعودی عرب میں جلد ازجلد کشیدگی ختم ہو جائے کیونکہ اسکی اشدضرورت ہے لیکن جب دونوں ممالک میں میں کشیدگی عروج پر ہو اور کوئی اور ملک آپ سے تعاون مانگ رہا ہوں تو اسکا مطالبہ یہ ہوتا ہے کہ آپ تعاون مانگنے والے ملک کو انکار کر رہے ہیں اور دوممالک میں کشیدگی کے خاتمے میں ثالثی کے کردار کیلئے حالات میں توازن ہو نا ضروری ہے اور جب ایسی صورتحال ہوگی تو پاکستان ضرور ثالثی کا کردارادا کر یگا۔ ایک سوال کے جواب میں مشیر خارجہ سر تاج عزیز نے کہا پاکستان اور سعودی عرب کے در میان بہت پرانے تعلقات ہیں اور سعودی وزیر خارجہ کے بعد اب سعودی وزیر دفاع کا دورہ بھی طے شدہ ہے اور پا ک سعودی تعلقات اور دیگر امور پر منگل کو پارلیمنٹ کی خار مہ امور کمیٹی میں اراکین کو ان کیمر ہ بر یفنگ دی جائیگی۔ انہوں نے کہا کہ ایران او ر سعودی عرب کے در میان کشیدگی میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور یہ انتہائی اہم معاملہ ہے اس لیے اس پر زیادہ بات کر کے کسی قسم کی غلط فہمی پیدا نہیں کر نی چاہیے فی الحال ہماری تر جیح ملک کے دفاعی اور سیکورٹی مفادات کا تحفظ ہے تاکہ دونوں ممالک کی کشیدگی کے اثرات پاکستان پر نہ آئے اور یہاں پر شیعہ اور سنی ایک دوسرے کے خلاف جلوس نہ نکالنے شروع کر دیں۔ ایک اور سوال کے جواب میں مشیر خارجہ سر تاج عزیز نے کہا کہ پٹھان کوٹ واقعے کی تحقیقات کر رہے ہیں پتہ چل جا ئیگااس سانحہ میں کون ملوث ہے۔

مزید :

صفحہ اول -