بٹ خیلہ میں ٹی ایم اے کے ملازمین تنخواہوں سے محروم

بٹ خیلہ میں ٹی ایم اے کے ملازمین تنخواہوں سے محروم

  

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ)متحدہ ٹریڈیونین بازاربٹ خیلہ کے صدرمحمداسراراورالیکشن کمیٹی کے چئیرمین حاجی شیرزمین خان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کی غفلت اورلاپرواہی کی و جہ سے ٹی ایم اے بٹ خیلہ کے ملازمین کے تنخواہیں گزشتہ پانچ ماہ سے تنخواہیں بندہونے کی وجہ سے بازاربٹ خیلہ اورگلی کوچے گندہ گی کی ڈھیرمیں تبدیلی ہوچکی ہے زیادہ گندہ گی کی وجہ سے ڈینگی مرض پھیلنے کیلئے راہ ہمرارکردی اگراس سال کوئی بھی شخص ڈینگی مرض میں مبتلاہوگئی تواس کے تمام ترذمداری صوبائی حکومت پرہوگی ۔ان خیالات کااظہارمحمداسرارخان اورحاجی شیرزمین خان نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ا نہوں نے کہاکہ بٹ خیلہ بازارکوایشیاء کاسب سے بڑابغیرچوک بازارہونے کااعزازحاصیل ہے مگربدقسمتی کی وجہ سے صوبائی حکومت نے ٹی ایم اے بٹ خیلہ کے ملازمین کی تنخواہیں گزشتہ پانچ ماہ سے بندہونے کی وجہ سے انہوں نے مجبوراًڈیوٹی چھوڑدی گئی ہے جس کی وجہ سے بازاربٹ خیلہ گندہ گی کی ڈھیر میں تبدیل ہوچکی اورمالاکنڈکے منتخب ممبران اسمبلی نے بھی اس سلسلے میں مکمل طورپرخاموشی اختیارکرلی ہے اورتماشائیوں کاکرداراداکررہے ہیں انہوں نے کہاکہ اس سلسلے میں ہم ٹی ایم اے ملازمین کے ساتھ ہیں اورصوبائی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ انجمن تاجران بازاربٹ خیلہ کے تاجروں کے شرافت سے ناجائزفائدہ مت اٹھائیں اورفوری طورپران کوتنخواہیں اداکی جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ اول -