تھر میں معصوم بچوں کی جانوں کا ضیاع افسوسناک ہے ، مفتی نعیم

تھر میں معصوم بچوں کی جانوں کا ضیاع افسوسناک ہے ، مفتی نعیم

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جامعہ بنوریہ عالمیہ کے مہتمم شیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ تھرمیں قحط سالی کی سنگین صورتحال کے باعث گزشتہ کئی ماہ سے روزانہ معصوم بچے موت کے منہ میں جارہے ہیں لیکن سندھ حکومت کوپرواہ ہی نہیں، پیپلزپارٹی کی اعلیٰ قیادت کے رویہ شرمناک ہے ،پی پی کے چیئرمین بلاول زرداری اوروزیراعلیٰ سندھ سمیت دیگروزرراء بیانات کی حدتک ہی امدادی کارروائیوں میں مصروف ہیں عملی طورپرکچھ نہیں کیاجارہاہے ہفتے کو جامعہ بنوریہ عالمیہ میں تھر میں معصوم بچوں کی اموات کے واقعات پرافسوس کا اظہار کرتے ہوئے مفتی محمدنعیم نے کہاکہ تھر کی صورت حال پرپیپلزپارٹی کو سیاست کرنے بجائے مشکلات کا حل نکالنے پر توجہ دینی چاہیے ہر سال قحط سالی کے معصوم بچوں اور میویشی موت کے منہ میں جارہے ہیں جس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر عائد ہوتی ہے ،انہوں نے کہاکہ تھر کے لیے ہسپتالوں کے اعلان خوش آیند ہیں مگر ہر سال اس طرح بچوں کی اموات کا ہونا لمحہ فکریہ اور حکومت کی لاپرواہی کا نتیجہ ہے انہوں نے کہاکہ سندھ کارڈکی بنیادپرہمیشہ سیاست کرنے والی پیپلزپارٹی کی حکومت نے سندھ کی عوام کومایوس کیاہے ،اموات میں اضافہ صوبائی حکومت کی غیرسنجیدگی کیساتھ وفاقی حکومت کی مصلحت کی سیاست کے باعث ہورہاہے۔ انہوں نے کہاکہ ایک طرف تھر میں بھوک اور پیاس کے باعث بچے بلک کر جان دے رہے ہیں تو دوسری جانب حکمران اپنی سیاست چمکانے میں مصروف ہیں اور یہ بھول گئے ہیں اقتدار کی کرسی تک پہنچانے والی یہی عوام ہے جس کو وہ نظر انداز کررہے ہیں ،انہوں نے کہاکہ حکمران اللہ کے عذاب سے ڈریں سیاست وکرسی بچانے کے بجائے عوامی مسائل پر توجہ دیں ، انہوں نے کہاکہ اموات کی ذمہ داری صوبائی حکومت کے ساتھ وفاقی حکومت پربھی عائد ہوتی ہے ،وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ ،وزیر اطلاعات اورسندھ کے دیگروزراء کارویہ قابل شرم اورقابل افسوس ہے، جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -