مصر'حسنی مبارک اوربیٹوں کی سزائیں برقرار رکھنے کا حکم

مصر'حسنی مبارک اوربیٹوں کی سزائیں برقرار رکھنے کا حکم
مصر'حسنی مبارک اوربیٹوں کی سزائیں برقرار رکھنے کا حکم

  

قاہرہ(صباح نیوز)مصری عدالت نے سابق صدر حسنی مبارک اور ان کے دوبیٹوں کے خلاف بدعنوانی کے الزام میں قید اور بھاری جرمانے کی سزا کو برقرار رکھنے کا حکم دے دیا ہے۔قاہرہ میں اپیل کورٹ نے سابق صدر حسنی مبارک اور ان کے دونوں بیٹوں علا اور جمال مبارک کی جانب سے دائر کی گئی اپیلوں کو مسترد کرتے ہوئے ان کے خلاف سزائوں پر عملدرآمد کا حکم دے دیا۔ مصری عدالت نے گزشتہ سال مئی کے مہینے میںحسنی مبارک اور انکے بیٹوں کے خلاف صدارتی محلات کے ٹھیکوں میں خوردبرد اور بدعنوانی کے الزام میں تین سال قید بامشقت اور ڈیڑھ کروڑ ڈالر سے زائد جرمانہ عائد کیا تھا اور ساتھ ہی ملزمان کو حکم دیا ہے کہ وہ سرکاری خزانے سے غبن کئے گئے26 لاکھ ڈالرز سے زائد رقوم کو فوری طور پرلوٹائیں۔مصر کی اعلی ترین اپیلٹ کورٹ کی جانب سے معزول صدر حسنی مبارک کو تین برس قید کی سزا کے قانونی اور سیاسی مضمرات پر روشنی ڈالنے ہوئے قانونی ماہری عصام الاسلامبولی نے کہا ہے کہ سزا کے بعد وہ صدر اور فوجی سربراہ کی پنشن، فوجی اعزاز کے ساتھ تدفین اور تمام عسکری میڈلز سے محروم ہو جائیں گے۔سزا کے بعد ان کے بیٹے اور وہ خود کسی بھی حکومتی منصب کے لئے ساری عمر کے لئے نااہل ہو جائیں گے۔ سزا میں سنایا گیا جرمانہ ادا نہ کر سکنے پر انہیں مزید قید کی سزا بھی کاٹنا ہو گی۔ عدالتی فیصلے کے تحت ان کی مصر سے باہر بھجوائی کی رقم واپس منگوائی جا سکتی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -