شریعت کی سزاﺅں کو انتقام کے معنوں میں نہیں لینا چاہیے: سعودی مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز الشیخ

شریعت کی سزاﺅں کو انتقام کے معنوں میں نہیں لینا چاہیے: سعودی مفتی اعظم شیخ ...
شریعت کی سزاﺅں کو انتقام کے معنوں میں نہیں لینا چاہیے: سعودی مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز الشیخ

  

جدہ (ویب ڈیسک) سعودی مفتی اعظم اور سینئر علماءبورڈ کے سربراہ شیخ عبدالعزیز الشیخ نے کہا ہے کہ اسلامی شریعت کی سزاﺅں کو انتقام کے معنوں میں نہیں لینا چاہئے۔ روزنامہ نوائے وقت میں شائع خبر میں سرکاری خبر ایجنسی اے پی پی کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ سعودی مفتی اعظم شیخ عبدالعزیز الشیخ نے امام ترکی بن عبدالعزیز مسجد میں خطبہ دیتے ہوئے کہا کہ شریعت میں مختلف جرائم کیلئے جو سزائیں مقرر ہیں انہیں انتقام قرار نہیں دینا چاہئے، درحقیقت یہ سزائیں اللہ کی طرف سے انسانوں پر رحم ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسلام معاشرے کو جرائم اور فساد سے بچانے کی تلقین کرتا ہے۔ اسلام عقیدے اور جان ومال کی حرمت کی حفاظت کی ضمانت دیتا ہے۔

سعودی مفتی اعظم نے کہا کہ اسلام نے جرائم کے انسداد کیلئے دو طریقہ کار وضع کئے ہیں جس میں اسلامی تعلیمات کے بارے میں آگاہی اور لوگوں کو برائیوں سے بچانے کی تلقین شامل ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مجرموں کو سزائے موت دینے کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ شہری امن اور سکون کے ساتھ شریعت کے مطابق اپنی زندگی گزار سکیں۔

مزید :

بین الاقوامی -