سعودی عرب کی سالمیت کو خطرہ ہوا تو پاکستان کی طرف سے سخت ردعمل آئے گا : جنر ل راحیل شریف

سعودی عرب کی سالمیت کو خطرہ ہوا تو پاکستان کی طرف سے سخت ردعمل آئے گا : جنر ل ...
سعودی عرب کی سالمیت کو خطرہ ہوا تو پاکستان کی طرف سے سخت ردعمل آئے گا : جنر ل راحیل شریف

  

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک)آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے کہا ہے کہ سعودی عرب کی علاقائی سالمیت کو خطرے کی صورت میں پاکستان کی طرف سے سخت ردعمل آئیگا، خلیجی ممالک کی سیکیورٹی کو اہم سمجھتے ہیں ۔

 سعودی نائب ولی عہد اور وزیر دفاع پرنس محمد بن سلمان نے دہشت گردی کیخلاف پاکستانی فوج کی کامیابیوں کو سراہتے ہوئے تمام امور پر پاکستانی موقف کی حمایت جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف سے سعودی عرب کے نائب ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان نے جنرل ہیڈکوارٹرز (جی ایچ کیو) میں ملاقات کی۔ بات چیت کے دوران علاقائی سلامتی اور دفاعی تعاون سے متعلق امور زیر غور لائے گئے۔ آرمی چیف نے کہا کہ سعودی عرب اور خلیج تعاون کونسل کے دیگر ممالک کےساتھ قریبی اور برادرانہ تعلقات ہیں اور پاکستان ان ممالک کی سیکیورٹی کو انتہائی اہمیت دیتا ہے ، انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کےساتھ پاکستان اپنے دفاعی تعلقات کو انتہائی اہم سمجھتا ہے ، انہوں نے یقین دلایا کہ سعودی عرب کی علاقائی سالمیت کو کسی خطرے کی صورت میں پاکستان کی طرف سے انتہائی سخت ردعمل ظاہر کیا جائیگا۔ سعودی وزیر دفاع نے کہا کہ ان کا ملک پاکستان اور اس کی مسلح افواج کو بہت اہمیت دیتا ہے اور دہشت گردی کیخلاف ان کی کامیابیوں کو سراہتا ہے انہوں نے علاقائی استحکام کیلئے پاکستان اور اس کی مسلح افواج کی کوششوں کی بھی تعریف کی۔ سعودی وزیر دفاع نے اپنے ملک کی طرف سے تمام امور پر پاکستانی موقف کی مکمل حمایت کا اعادہ کیا۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -