علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کا انتقال پُر ملال

علی اکبر ہاشمی رفسنجانی کا انتقال پُر ملال

  

دل کے عارضے میں مبتلا ایران کے سابق صدر علی اکبر ہاشمی رفسنجانی 82سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔ وہ ایران کی مصالحتی کونسل کے سربراہ بھی تھے۔ علی اکبر ہاشمی رفسنجانی 1934ء میں ایک کسان کے گھر میں پیدا ہوئے۔ وہ امام خمینی کے ہم جماعت بھی رہے۔ وہ 1989ء سے 1997ء تک ایران کے صدر رہے۔ انہیں اصلاح پسند ایرانی صدر کے طور پر شہرت حاصل ہوئی۔ انہوں نے اپنے دور میں عراق سے جنگ ختم کرنے کے بعد ملک میں از سر نو تعمیراتی پروگرام شروع کیا۔ صدر بننے سے پہلے وہ ایرانی پارلیمنٹ کے سپیکر بھی رہے۔ صدارت سے علیحدگی کے بعد بھی انہوں نے سیاست میں نہ صرف اپنی سرگرمیاں جاری رکھیں بلکہ اپنی صاحبزادی کو بھی سیاسی معاملات میں آگے بڑھایا۔ صدر محمود احمدی نژاد نے ایک موقع پر ان کی صاحبزادی کو گرفتار کر کے ان کے سیاسی دباؤ کو کم کرنے کی کوشش کی۔ علی اکبر ہاشمی رفسنجانی اپنی پالیسیوں کے حوالے سے سیاسی ترقی کی بجائے مضبوط معاشی ترقی کو ترجیح دیتے رہے۔ ان کی خدمات کو آج بھی ایران میں عوام احترام کے ساتھ یاد کرتے ہیں۔

مزید :

اداریہ -