ہائیکورٹ ،ایچ ای سی کوکامسیٹس کی جاری دو میں سے ایک ڈگری کی تصدیق کا حکم

ہائیکورٹ ،ایچ ای سی کوکامسیٹس کی جاری دو میں سے ایک ڈگری کی تصدیق کا حکم

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ہائر ایجوکیشن کمیشن کوکامسیٹس یونیورسٹی کے2800طلباکی دوہری ڈگری پروگرام کے تحت کامسیٹس کی طرف سے جاری کردہ دو میں سے ایک ڈگری کی تصدیق کا حکم دے دیاہے جبکہ عدالت نے متاثرہ طالب علموں کو ہرجانے کے لئے سول کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کر دی۔لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ اور جسٹس شجاعت علی خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی۔عدالت کے روبروطلحہ ابوبکرسمیت 100سے زائدطلبا نے موقف اختیار کیا کہ کامسیٹس یونیورسٹی نے طلباسے دوہری ڈگری کے تحت لاکھوں روپے فیس وصول کی. ڈگری کے اجراکاوقت آیاتویونیورسٹی نے برطانوی یونیورسٹی کی ڈگری کی آفرکردی۔انہوں نے کہا کہ برطانوی یونیورسٹی لنکاسٹرکی ڈگری کہیں سے تصدیق شدہ نہیں،ہائرایجوکیشن کمیشن کوبرطانوی یونیورسٹی لنکاسٹرکی ڈگری کی تصدیق کاحکم دیا جائے۔چیئرمین ہائر ایجوکیشن کمیشن نے عدالت کو آگاہ کیاکہ کامسیٹس یونیورسٹی نے قوانین کو نظر انداز کر کے طلباء سے پیسے ہتھیانے کے لئے دوہری ڈگری پروگرام شروع کیا،اانہوں نے بتایا کہ کامسیٹس یونیورسٹی نے دوہری ڈگری کے اجراء سے قبل ہائر ایجوکیشن کمیشن، پاکستان انجینئرنگ کونسل اور برطانوی انجینئرنگ کونسل سے بھی منظوری حاصل نہیں کی،.طلباء کے مستقبل کو بچانے کے لئے ایک ڈگری کی تصدیق کی جا سکتی ہے ،لنکاسٹر یونیورسٹی ہائر ایجوکیشن کمیشن کے دائرہ اختیار میں نہیں ،عدالت کامسیٹس یونیورسٹی کو طلباء سے دوہری ڈگری کے نام پر ہتھیائی گئی رقم واپس کرنے کا حکم دے۔عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل مکمل ہونے کے بعد ہائر ایجوکیشن کمیشن کو کامسیٹس یونیورسٹی کی جاری کردہ ڈگری کی تصدیق کا حکم دے دیا،عدالت نے دوہری ڈگری کے اجراء کے حوالے سے ہائر ایجوکیشن کمیشن کو قانون سازی کرنے کی ہدائت کرتے ہوئے متاثرہ طالب علموں کو یونیورسٹی کے خلاف ہرجانے کے لئے سول کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کر دی،عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا ہے کہ لنکاسٹر یونیورسٹی کی دوسری ڈگری کی تصدیق کرنا ہائر ایجوکیشن کمیشن کے دائر اختیار میں نہیں آتا۔

مزید :

علاقائی -