امریکی نیوی کی ایرانی کشتیوں پر انتباہی فائرنگ، کوئی جانی نقصان نہیں ہوا

امریکی نیوی کی ایرانی کشتیوں پر انتباہی فائرنگ، کوئی جانی نقصان نہیں ہوا

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکن نیوی کے ایک جہاز نے انتہائی تیز رفتاری سے آنے والی چار چھوٹی ایرانی کشتیوں کی جانب سے انتباہی برسٹ فائر کیے گئے جس کے نتیجے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا، اس فائرنگ کا مقصد ایرانی کشتیوں کو امریکی بحری بیڑے سے دور رکھنا تھا۔اے بی سی نیوز کے مطابق یہ واقعہ ایرانی خلیج میں اس وقت پیش آیا جب امریکی بحری بیڑے میں شامل جہاز مہان اور دیگر بحری جہاز ہرمز کی طرف جا رہے تھے۔ ایرانی کشتیاں امریکی بحریہ کے جہاز مہان سے 890 گز کے فاصلے پر تھیں تو امریکی جہاز نے تین انتباہی راؤنڈ فائر کیے جن کے باعث ایرانی کشتیاں واپس چلی گئیں۔ امریکی بحریہ کی جانب سے ایرانی کشتیوں کو دور رکھنے کیلئے جہاز کے عرشے پر مشعلیں روشن کی گئیں جبکہ ایک ہیلی کاپٹر کے ذریعے دھواں بھی پیدا کیا گیا۔ امریکی محکمہ دفاع کے ایک اہلکار نے بتایا کہ ایرانی کشتیوں کی جانب سے مہان جہاز پر بذریعہ ریڈیو رابطہ کیا گیا اور اس سے شناخت کا پوچھا گیا جس کے بعد رابطہ منقطع کرکے آگے بڑھنا شروع کردیا جس پر انتباہی فائر کیے گئے۔اس واقعے میں کسی بھی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی زخمی ہوا ہے۔ خلیج فارس میں امریکی بحریہ اور ایرانی انقلابی بحریہ کی چھوٹی کشتیوں میں اس طرح کے تصادم معمول کی بات ہیں لیکن امریکی بحریہ کی جانب سے انتباہی فائرنگ بہت ہی کم کی جاتی ہے۔

فائرنگ

مزید :

صفحہ اول -