طیبہ کا طبی معائنہ مکمل،تشدد کے نشانات موجود ہیں،ڈاکٹرجاوید

طیبہ کا طبی معائنہ مکمل،تشدد کے نشانات موجود ہیں،ڈاکٹرجاوید

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی دارالحکومت میں جج کے گھر تشدد کا نشانہ بننے والی طیبہ کا پمز ہسپتال میں پانچ رکنی میڈیکل بورڈ نے طبی معائنہ کر لیا ۔میڈ یکل بورڈ کے سربراہ ڈاکٹر جاوید کا کہنا ہے کہ طیبہ کے جسم پر تشدد کے نشانات موجود ہیں ،کچھ ٹیسٹوں کے نمونے آنے کے بعد میڈیکل رپورٹ تیار کر کے سپریم کورٹ میں جمع کرادی جائے گی ۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق اسلام آباد کے مضافات سے ملنے والی طیبہ کے طبی معائنے کے لیے ڈاکٹر جاوید کی سربراہی میں 5رکنی میڈیکل بورڈ تشکیل دیا گیا جس میں پلاسٹک سرجن ڈاکٹر حمید ،جنرل سرجن ڈاکٹر ایس ایچ وقار ،ماہر نفسیات ڈاکٹر عاصمہ اور برن سرجن ڈاکٹر طارق شامل تھے ۔میڈیکل بورڈ نے ڈی این اے ٹیسٹ کروانے کے لیے بچی کے خون کے نمونے لیے گئے اور اس کے علاوہ بچی کے جسم پر جلنے کے نشانات کے بھی نمونے لیے گئے ۔میڈیکل بورڈ میں شامل سائیکالوجسٹ ڈاکٹر عاصمہ نے بچی کی ذہنی حالت کا جائزہ لیا جس پر بتا یا گیا کہ طیبہ ابھی بھی سہمی ہوئی ہے اور تشدد کے باعث اس کی ذہنی حالت متاثر ہے۔ ڈاکٹر جاوید نے بتایا کہ بچی کے جسم پر ابھی تک زخموں کے نشانات موجود ہیں ۔انہوں نے بتا یا کہ ٹیسٹوں کی حتمی رپورٹس آنے کے بعد طیبہ کی میڈیکل رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی جائے گی۔ میڈیکل بورڈ نے بچی طیبہ ، مبینہ بھائی زین ، والدہ نصرت اور والد اعظم کا بھی ڈی این اے سمپل لے لیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -