صوبے کو پولیو فری بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں :وزیر اعلیٰ سندھ

صوبے کو پولیو فری بنانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں :وزیر اعلیٰ سندھ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے محکمہ صحت کے ہدایت دیتے ہوئے کہاہے کہ جوبھی اقدامات کرنے ہیں کریں، مجھے سندھ پولیو فری چاہئے، یہ نہ صرف میرا بلکہ سندھ کے ہر شخص کا وعدہ ہے کہ سندھ میں پولیو کا خاتمہ کیا جائے،2015میں پولیو کے سندھ میں 12 کیسز تھے اور اب 8 ہیں، میں اس پر خوش نہیں ہوں لیکن مجھے یہ تکلیف ہو رہی ہے کہ 2016 میں 8 کیسز کیوں ہیں۔پیرکووزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی صدارت میں نیو سندھ سیکرٹریٹ کے کیبنٹ روم میں پولیو کے خاتمے سے متعلق ایک اہم اجلاس منعقد ہوا ۔اجلاس میں چیف سیکرٹری سندھ رضوان میمن، سیکرٹری محکمہ صحت ڈاکٹر فضل اللہ پیچوہو، انسداد پولیو پروگرام کے کوآرڈی نیٹر فیاض جتوئی،آئی جی سندھ پولیس اللہ ڈنوخواجہ سمیت وفاقی حکومت کے افسران ، تمام ڈویژنل کمشنرز اور دیگر سینئر افسروں نے شرکت کی ۔ انسداد پولیو پروگرام کے کوآرڈی نیٹر فیاض جتوئی نے اجلاس کو پولیس کے حوالے سے جبکہ آئی جی سندھ پولیس اے ڈی خواجہ نے پولیو ٹیموں کو دی جانے والی سکیورٹی پر بریفنگ دی ۔ پروگرام کوآرڈی نیٹر فیاض جتوئی نے اپنی بریفنگ میں بتایا کہ اس وقت پاکستان میں کل 19 پولیو کیسز ہیں جن میں 8 سندھ میں اور 8 خیبر پختون خوا میں ہیں۔ 8 کیسز میں ایک کراچی اور 7 سندھ کے دیگر اضلاع خصوصاً زیریں سندھ کے اضلاع میں ہیں ۔اجلاس سے خطاب میں وزیراعلی سندھ نے کہاکہ ہائی پروفائل اجلاس کرنے کا مقصد پولیو کو ختم کرنے کے لیے سندھ حکومت کی کمٹ منٹ کو پورا کیا جائے ۔ جو بھی اقدامات کرنے ہیں ،مجھے سندھ پولیو فری چاہئے ۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ میں پولیو پر آج دوسرا اجلاس منعقد کر رہا ہوں ۔ یہ نہ صرف میرا بلکہ سندھ کے ہر شخص کا وعدہ ہے کہ سندھ میں پولیو کا خاتمہ کیا جائے ۔2015 میں پولیو کے سندھ میں 12 کیسز تھے اور اب 8 ہیں۔ میں اس پر خوش نہیں ہوں۔ لیکن مجھے یہ تکلیف ہو رہی ہے کہ 2016 میں 8 کیسز کیوں ہیں۔ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ پولیو سے متعلق آئندہ اجلاس میں میئر کراچی کو بھی بلایا جائے ۔ کراچی کے جن اسپتالوں میں ڈاکٹرز اور ایم ایس نہیں ہیں ، وہاں ان کا فوری تقرر کیا جائے ۔ وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ بجلی کی بندش باعث پولیو ویکسین کی اسٹوریج کے مسائل درپیش ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی کہ شمسی توانائی والے ریفریجریٹر کا بندوبست کیا جائے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -