کسانوں کو درپیش مسائل فوری طور پر حل کرنے کی ضرورت ہے :سکندر شیر پاؤ

کسانوں کو درپیش مسائل فوری طور پر حل کرنے کی ضرورت ہے :سکندر شیر پاؤ

  

پشاور( سٹاف رپورٹر )خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر برائے آبپاشی سکندر حیات خان شیر پاؤ نے محکمہ آبپاشی کے حکام کو ہدایت کی ہے کہ پشاور کے مضافاتی زرعی علاقوں میں کسانوں کو آبپاشی کے سلسلے میں درپیش مسائل کو فوری طور پر مستقل بنیادوں کے تحت حل کریں تاکہ علاقہ کے عوام اپنی زمینوں سے اچھی فصلیں اگا کر نہ صرف اپنے مسائل حل کر سکیں بلکہ ملکی معیشت کی ترقی میں بھی کردار ادا کر سکیں۔ انہوں نے یہ ہدایات پیر کے روز متھرا پشاور میں ہاشم بابر کے حجرہ میں مختلف علاقوں کے کسانوں کے وفود سے بات چیت کرتے ہوئے دیں۔ اس موقع پر سفید سنگ، ڈاگ لارہ، ڈیرے کلے، ڈاگ تیراؤ، علی محمد گڑھی، گڑھی مستجاب، پٹوار بالا اور ریار غلجو کے علاقوں سے آنے والے وفود نے صوبائی وزیر سے ملاقات کی اور اپنے اپنے علاقوں میں آبپاشی سے متعلق مختلف مسائل بیان کئے۔ اس موقع پر اے سی پشاور سرکل ، ایکسین پشاور سرکل اور محکمہ آبپاشی کے دیگر افسران بھی موجود تھے۔ سینئرصوبائی وزیر نے کہا کہ یہ زرعی علاقے ہیں اور عوام کی زندگی کا دارو مدار کاشتکاری پر ہے اس لئے حکومت پوری کوشش کر رہی ہے کہ کاشتکار وں کے دوسرے مسائل کے ساتھ ساتھ آبپاشی کے نظام کو بہتر بنایا جا سکے۔ انہوں نے مذکورہ علاقوں میں آبپاشی کے مختلف منصوبوں پر فوری طور پر عملی اقدامات اٹھانے کیلئے ہدایات جاری کیں۔ صوبائی وزیر نے محکمہ کے افسران کو ہدایت کی کہ وہ ہر منصوبے میں متعلقہ عوام کے ساتھ بہتر رابطہ رکھیں اور ان کی ضروریات اور تجاویز کو منصوبوں میں شامل کریں۔صوبائی وزیر نے علاقے کے عوام کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے حکومت کو اپنے مسائل سے آگاہ کیا اور زراعت کی ترقی اور مربوط آبپاشی نظام کیلئے اپنے تجربات کی بنیاد پر بہتر تجاویز پیش کیں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -