نامور اہلِ قلم، دانشوروں کا نیشنل بُک فاؤنڈیشن کا دورہ، بُک میوزیم کی پذیرائی

نامور اہلِ قلم، دانشوروں کا نیشنل بُک فاؤنڈیشن کا دورہ، بُک میوزیم کی ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) گذشتہ دنوں دارالحکومت اسلام آباد میں کادمی ادبیات کی اہلِ قلم کانفرنس کے لیے ملک بھر سے آئے مندوبین ، نامور شاعروں، ادیبوں ، کالم نگاروں، اور مصنفین میں سے چند معروف قلم کاروں نے مختلف اوقات میں نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے صدر دفتر کا خصوصی دورہ کیا جنھیں این بی ایف کے مینیجنگ ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے این بی ایف کی کارکردگی بالخصوص پچھلے تین برسوں میں حاصل ہونے والی نمایاں کامیابیوں اور ادارے کے اہم منصوبوں کے بارے میں بریف کیا۔معزز مہمانان نے این بی ایف کے نیشنل بُک میوزیم کو معلومات اور نوادرات کے حوالے سے ایک جہانِ حیرت قرار دیا۔ انہوں نے مرکزی بُک شاپ، یک سنگی کتاب، حافظ شیرازی کارنر، نظامی گنجوی کارنر، بُک پارک، وال آف آنر، ریڈرز بُک کلب، مائی بُک شیلف، بُک وال کلاک، جنرل بکس اور ٹیکسٹ بُکس شیلفوں، چلڈرن سمر بُک کلب اور دیگر اہم گوشوں کا بھی تفصیلی دورہ کیا۔ مہمانوں نے ایم ڈی کو مبارک باد دیتے ہوئے این بی ایف کی شاندار ترقی کو ایک مثال قرار دیا اور میوزیم میں موجود ’’وال آف آٹو گراف‘‘ میں آٹو گراف کے علاوہ وزیٹرزبُک میں اپنے تاثرات بھی قلمبند کیے۔وزٹ کرنے والوں میں کراچی،لاہور، فیصل آباد، صوابی، ساہیوال، سکردو، اور دیگر شہروں سے پروفیسر سحر انصاری، ڈاکٹر تحسین فراقی، سعد اللہ شاہ، ڈاکٹر اقبال آفاقی، ڈاکٹر محمد اصغر بلوچ، ڈاکٹر توصیف تبسم، ڈاکٹرطارق ہاشمی، ڈاکٹر تحسین بی بی ، اشفاق احمد ، صغیر انور، اسلم سحراور حسن عباس رضاسمیت کئی دیگر شامل تھے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -