لاکھوں مالیت کی منشیات سمگل کرنیوالے ملزم کی سزا کالعدم

لاکھوں مالیت کی منشیات سمگل کرنیوالے ملزم کی سزا کالعدم

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس روح لامین اورجسٹس سید افسرشاہ پرمشتمل دورکنی بنچ نے لاکھوں روپے مالیت کی منشیات سمگل کرنے پر سات سال قید اورایک لاکھ روپے جرمانہ کی سزاپانے والے پولیس اہلکار اپیل منظورکرکے سزاکالعدم قرار دے دی فاضل بنچ نے گذشتہ روز صاحبزادہ اسداللہ ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائرپولیس کانسٹیبل افتخارخان کی اپیل کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ استغاثہ کے مطابق تھانہ تخت بھائی پولیس نے 13اکتوبر2015ء کو ایک کارروائی کے دوران ملزم پولیس کانسٹیبل افتخارخان ساکن غنڈہ خیل چارسدہ کو گرفتار کرکے اس کے قبضے سے دو کلوگرام چرس برآمد کی تھی ماتحت عدالت نے جرم ثابت ہونے پرملزم کو سات سال قید بامشقت اورایک لاکھ روپے جرمانہ کی سزاسنائی تاہم مقدمے کی سماعت کے دوران اہم شہادتوں کونظرانداز کیا گیا ہے جبکہ استغاثہ کے گواہوں کے بیانات میں واضح تضاد تھا اورماتحت عدالت میں جس موٹرسائیکل سے منشیات برآمد ہوئی تھی وہ بھی عدالت میں پیش نہیں کی گئی لہذاماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے فاضل عدالت نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پرقیدوجرمانہ کی سزاکالعدم قرار دے دی ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -