آرٹیکل 62اور 63پر ابزرویشن نہیں دینی چاہئیے تھی ، الفاظ واپس لیتا ہوں : جسٹس آصف سعید کھوسہ

آرٹیکل 62اور 63پر ابزرویشن نہیں دینی چاہئیے تھی ، الفاظ واپس لیتا ہوں : جسٹس ...
آرٹیکل 62اور 63پر ابزرویشن نہیں دینی چاہئیے تھی ، الفاظ واپس لیتا ہوں : جسٹس آصف سعید کھوسہ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) جسٹس آصف سعید کھوسہ نے آرٹیکل 62اور 63کے حوالے سے اپنے الفاظ واپس لے لیے ۔

نیو نیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی سماعت شروع ہوئی تو بینچ کے سربراہ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیے کہ میراخیال ہے مجھے آرٹیکل 62اور 63سے متعلق آبزرویشن نہیں دینی چاہئیے تھی ۔

پاناما کیس کی گزشتہ روز کی سماعت کی تفصیلی خبر پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں

انہوں نے کہا کہ مجھے اپنے الفاظ پر ندامت ہے اور میں اپنے کل کے الفاظ وااپس لیتا ہوں ۔گزشتہ سماعت کے دوران انہوں نے نعیم بخاری کی جانب سے وزیر اعظم کو نااہل کرنے کی استدعا پر ریمارکس دیے تھے کہ اگر آرٹیکل 62 اور63 لگایا تو پارلیمنٹ میں سراج الحق کے علاوہ کوئی اور نہیں بچے گا ۔ انہوں نے تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ بخاری صاحب آرٹیکل 62 اور 63 آپکے موکل پر بھی لاگو ہو سکتا ہے۔

مزید :

قومی -