’میرے شوہر نے کہا کہ میں بزنس کلاس کی سیٹ کرواتا ہوں اور تم بچوں کو لے کر اکانومی میں بیٹھ جانا کیونکہ۔۔۔‘ چھٹیوں پر جانے والی خاتون نے ایسی بات بتادی کہ سن کر انٹرنیٹ پر ہر شخص کو غصہ آگیا

’میرے شوہر نے کہا کہ میں بزنس کلاس کی سیٹ کرواتا ہوں اور تم بچوں کو لے کر ...
 ’میرے شوہر نے کہا کہ میں بزنس کلاس کی سیٹ کرواتا ہوں اور تم بچوں کو لے کر اکانومی میں بیٹھ جانا کیونکہ۔۔۔‘ چھٹیوں پر جانے والی خاتون نے ایسی بات بتادی کہ سن کر انٹرنیٹ پر ہر شخص کو غصہ آگیا

  

لندن (نیوز ڈیسک) عام طور پر تو مرد اپنی جان کود کھوں میں ڈال کر بیوی بچوں کو خوش رکھنے کی ہر ممکن کوشش کرتے ہیں مگر برطانیہ میں ایک صاحب نے خود غرضی کی انتہا کردی اور بیوی بچوں کو اکانومی کلاس میں بٹھا کر خود بزنس کلاس کے مزے لوٹتے رہے۔

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق خودغرض خاوند کا پول اس کی اپنی بیوی نے ویب سائٹ ممز نیٹ پر کھولا ہے۔ اس خاتون نے اپنی ایک پوسٹ میں لکھا ”ہم لوگ سردیوں کی چھٹیوں کے لئے ایک ایسی جگہ جارہے تھے جہاں ہمیں کافی دھوپ مل سکے۔ میرے خاوند کا کہنا تھا کہ وہ اکانومی کلاس میں تین گھنٹے سے زائد وقت کے لئے نہیں بیٹھ سکتے کیونکہ ان کی ٹانگیں تھک جاتی ہیں۔ ان کی ٹانگیں بہت لمبی ہیں کیونکہ ان کا قد چھ فٹ ساڑھے تین انچ ہے۔ بدقسمتی سے ہماری پرواز کا وقت تین گھنٹے سے زائد تھا اور وہ کمپرومائز پر تیار نہیں تھے۔ تو انہوں نے یہی فیصلہ کیا کہ وہ خود بزنس کلاس میں بیٹھیں گے اور میں اور بچے اکانومی کلاس میں خوار ہوں گے۔ اس طرح سفر کرنے پر مجھے بہت غصہ آیا، اور ہمیں ان کی بزنس کلاس کی خواہش پوری کرنے کے لئے 1000 پاﺅنڈ اضافی بھی خرچ کرنا پڑے۔“

خاتون کی جانب سے اپنے خاوند کی آرام پرستی اور خود غرضی کی شکایت سامنے آنے کے بعد خواتین کی بڑی تعداد نے ان کے ساتھ اظہار ہمدردی کیا۔ ایک خاتون نے لکھا ”میرے خاوند کی ٹانگیں بھی بہت لمبی ہیں لیکن وہ تو آرام سے اکانومی کلاس میں بیٹھے رہتے ہیں۔“ ایک اور نے توجہ دلائی ”آپ انہیں بزنس کلاس میں بٹھانے کی بجائے اکانومی کلاس میں ہی خصوصی سیٹ دلواسکتی تھیں۔“ جبکہ ایک خاتون نے سب سے عمدہ مشورہ دیتے ہوئے کہا ”اس مسئلے کا حل تو یہ تھا کہ آپ انہیں گھر چھوڑتیں اور بچوں کو لے کر چھٹیاں منانے چلی جاتیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -