ایجوکیشن بورڈنے امتحانی نظام کو تجربہ گاہ بنا دیا

ایجوکیشن بورڈنے امتحانی نظام کو تجربہ گاہ بنا دیا

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن نے امتحانات کے نظام کو تجربہ گاہ بنا لیا۔میٹرک اور ایف،ایس ،سی سائنس مضامین کے امتحانات میں گریڈنگ سسٹم کی بجائے پریکٹیکل کا پرانا نظام دوبارہ بحال کر دیا گیا ۔لاہور بورڈ کے امتحانات میں پے در پے تجربات سے طلباء چکراء کر رہ گئے ۔تفصیلات کے مطابق لاہور بورڈ نے میٹرک اور انٹر میڈیٹ کے آئندہ امتحانات کے لئے اہم تبدیلیوں کا حتمی فیصلہ کر لیا جس کے تحت بورڈ کے ائندہ سالانہ امتحانات میں گریڈ سسٹم کی بجائے دوبارہ سے پریکٹیکل کا نظام بحال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔جس سے میٹر ک اور انٹرمیڈیٹ کے طلباء سخت تشویش میں مبتلاء ہو گئے ہیں ۔طلباء کے والدین کا کہنا ہے کہ لاہور بورڈ کے امتحانات میں بار بار کے تجربات سے ان کے بچے ذہنی اذیت میں مبتلاء ہو گئے ہیں ۔بورڈ کے بار بار امتحانات کے نظام میں تبدیلیاں کرنے پر حکومت کو نوٹس لینا چاہئے ۔ادھر لاہور بورڈ کے کنٹرولر امتحانات ناصر جمیل نے کہا ہے کہ بورڈ امتحانات میں تبدیلیاں وزیر اعلی کی ہدایت پر کی جا رہی ہیں جس میں امتحانات میں مارکنگ کے نظام میں تبدیلیاں بھی شامل ہیں انہوں نے کہا کہ امتحانات میں گریڈنگ سسٹم میں پریکٹیکل کے نظام کو دوبارہ بحال کرنے کا مقصد طالب علموں کے ساتھ ہونے والی حق تلفی کو روکنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ آئندہ سائنس مضامین کے پرچے ایسے ٹیچر چیک کیا کریں گے جو سکولوں اور کالجوں میں ریگولر کلاسیں پڑھا رہے ہوں۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -