35لاکھ دیت‘ پتافی اور حلوانی قبائل میں جاری جنگ کا خاتمہ

  35لاکھ دیت‘ پتافی اور حلوانی قبائل میں جاری جنگ کا خاتمہ

  



جام پور(نامہ نگار) پتافی اور حلوانی قبائل کے درمیان دوسال جاری جنگ کاخاتمہ۔ سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی گورچانی کے والد سردار پرویز خان گورچانی نے دونو ں قبائل کے درمیان صلع کرادی۔ صلع کے لیے سردار پرویز خان گورچانی زیر قیادت پنچائیی اکٹھ۔ پچاس لاکھ روپے دیت مقرر۔ مجرم پارٹی کی طرف سے معافی مانگنے پر پندرہ لاکھ روپے معاف۔ باقی پنتیس لاکھ روپے کی رقم مئی دو ہزار بیس میں اداء کی جائے گی۔ دونوں اقوام کے درمیاں صلع سے مزید خون ریزی کا خطرہ ٹل گیا۔ اہل (بقیہ نمبر42صفحہ7پر)

علاقہ کا قبائل سردار پرویز احمد گورچانی کو صلع کرانے پر خراج تحسین پیش۔تفصیل کے مطابق کوہ سلیمان کے علاقے دراگل کے رہاشی منظور احمد پتافی نے حاجی پور کے علاقے میں زمیں مٹہ پرلیتے ہوئے رہاش اختیار کر لی۔ اسی دوران ایک دن پتافی قبائل کے نوجوانوں اور حلوانی قبائل کے نوجوانوں کے درمیان موٹر سایکل کو آگے لے جانے پر تنازعہ شروع ہو گیا۔ تنازعہ بڑھتا گیا۔ منظور پتافی کے نوجوانوں نے فائرنگ کرکے جمیل حلوانی اور دیگر کو پستول کے فائر کرکے شدید زخمی کر دیا۔ پولیس تھانہ حاجی پور نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا تاہم پتافی اقوام دوبارہ واپس دراگل کے علاقے پہنچ گئے۔ جبکہ پیچھے سے چھوڑی جانے والی خواتین کو حاصل چانگ نے دراگل پہنچایا۔ جبکہ پنتالیس بھیڑ بکریاں۔ اور سات بڑے جانور وں پر حلوانیوں نے قبضہ کر لیا۔ تاہم متعدد بار دونوں اقوام کے درمیان فائرنگ کو تبالہ ہو ا۔ گزشتہ روز مقامی قبائل سردار پرویز اقبال گورچانی کی سربرائی میں پنچایتی اکٹھ ہو ا جس میں سید اسماعیل شاہ سمیت دیگر مقامی عمائدین نے شرکت کی۔ ثالثین کے فیصلہ کے مطابق پتافی اقوام حلوانی اقوام کو پچاس لاکھ روپے بطور دیت اداء کرے گی۔ اہل علاقہ اور معززین کی منت سماجت پر پندرہ لاکھ معاف کر دیے گئے جبکہ باقی رقم مئی دوہزا ر بیس میں اداء کی جائے گی۔ اہل علاقے اور متعدد اقوام کے مقدمین نے دونو ں قوام کے درمیان صلع کرانے پر سابق ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی کے والد سردار پرویز اقبال گورچانی کو خراج تحسین پیش کیا ہے اور علاقے کے لیے صلع کو نیک شگون قرار دیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر