جماعت اسلامی کے زیر اہتمام مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ  

جماعت اسلامی کے زیر اہتمام مہنگائی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ  

  



 ملتان (سٹی رپورٹر)جماعت اسلامی ملتان کے زیر اہتمام مہنگائی،پٹرولیم مصنوعات،بجلی،ایل پی جی اور اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف ملتان پریس کلب کے سامنے گلے میں سوکھی روٹیاں لٹکا کر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اور اس موقع پر بجلی وسوئی گیس کے بلز بھی نذر آتش کئے گئے احتجاجی مظاہرہ کی قیادت امیر جماعت اسلامی ضلع ملتان ڈاکٹر صفدر اقبال ہاشمی، سیکر ٹری جنرل چودھری اطہر(بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

 عزیز ایڈووکیٹ، ڈاکٹر حفیظ انورنے کی احتجاجی مظاہرے میں ڈپٹی سیکر ٹری جنرل شیخ اسرار حسین، چودھری محمد امین، عبدالرحمن حیدری،حافظ عبدالرحمن قریشی،سعید اللہ شیخ،شاہد عباس،شیخ قیصر اقبال، ڈاکٹر عمر حیات، فیضان جہانگیر، انجینئر سجاد،حنیف لعل،چودھری عبدالرحمن، راناا قبال،عرفان عرشی،ذوالفقار،آصف شاہ،مستقیم مجاہد،طارق مسعود،مہر عاشق، ثاقب راناودیگرسینکڑوں افراد نے شرکت کی۔احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی ضلع ملتان ڈاکٹر صفدر اقبال ہاشمی نے مطالبہ کیا کہ حکومت قیمتوں میں اضافہ واپس لے وزیر اعظم کہتے تھے کہ عوام کو46روپے فی لٹر پٹرول فروخت کیا جائے تو بھی حکومت کو فی لٹر 12روپے کی بچت ہوتی ہے لیکن آج وہی پٹرول118روپے میں عوام لینے پر مجبور ہیں اور تبدیلی سرکار غریب کے خو ن کا آخری قطرہ تک نچوڑنے کیلئے پٹرول، گیس، بجلی کی قیمتوں میں اضافے پر اضافہ کئے جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ نا اہل ٹولے نے وزراء کی شاہ خرچیوں، عیاشیوں کیلئے ملک کو آئی ایم ایف کی غلامی میں جکڑ دیا ہے حکومت آئی ایم ایف کی ڈیمانڈ پر روز بروز اشیائے خوردو نوش کی قیمتوں میں اضافہ کررہی ہے عوام آٹا، چینی، دال، چاول، گھی جیسی بنیادی ضروریات سے محروم ہوچکی ہیں۔ بجلی کی قیمت میں اضافہ کے ساتھ ساتھ ٹیکسوں کی بھر مار نے غریب کی کمر توڑ دی ہے۔ڈاکٹر صفدر اقبال ہاشمی نے کہا کہ حکومت اپنی کارکردگی بہتر بنانے کی بجائے میڈیا ایڈوائز ر بڑھارہی ہے۔ ملک میں انقلاب لانے کے دعویداروں نے قوم کو شدید مایوس کیا ہے۔ اپنے کرپٹ افراد کو بچانے کے لیے نیب آرڈیننس میں رد و بدل شرمناک فعل ہے۔ احتساب کا پورا نظام ہی شکوک و شبہات پر چل رہا ہے۔عوامی فلاح و بہبود کے لیے حکومت اور اداروں کی روایتی بے حسی، کاہلی اور سستی المیہ ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت کے 18ماہ میں صوبے میں بیوروکریسی اکھاڑ بچھاڑ کرکے رکھ دی۔ مگر عوام کو ریلیف میسر آیا اور نہ کوئی بہتری کے اثرات نظر آئے۔ انہوں نے کہا ہے کہ حکومت اقربا پروری پر چل رہی ہے۔ حکمرانوں کی کوئی سمت متعین نہیں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت کے ذمے قرضہ 32ہزار 130ارب سے تجاوز کرگیا۔ ادارے تباہ اور عوام بد حال ہیں جبکہ حکمران عوام کو جھوٹی تسلیاں دے رہیں۔

جماعت اسلامی 

مزید : ملتان صفحہ آخر