شیخ زید ہسپتال‘ 9ماہ بعد انتظامیہ کا نوٹس  جدید سی ٹی سکین مشین فعال کرنیکا حکم

  شیخ زید ہسپتال‘ 9ماہ بعد انتظامیہ کا نوٹس  جدید سی ٹی سکین مشین فعال ...

  



رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)شیخ زید ہسپتال میں نو ماہ سے زائد عرصہ سے خراب سی ٹی اسکین مشین کی خرابی کے باعث میڈیا رپورٹس اور عوامی شکایات پر ڈپٹی کمشنر کا نوٹس، شیخ زید ہسپتال میں دستیاب نئی جدید سی ٹی اسکین مشین کو پرانی جگہ پر(بقیہ نمبر25صفحہ12پر)

 انسٹال کرکے فنکشنل کرنے کے لئے اقدامات کا آغاز، ڈپٹی کمشنر نے سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن اور پرنسپل شیخ زیدمیڈیکل کالج کو ضلعی انتظامیہ کے موقف سے آگاہ کرنے کے لئے مراسلہ ارسال کر دیا۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے اپنی تعیناتی کے فوری بعد شیخ زید میڈیکل کالج و ہسپتال کا تفصیلی دورہ کیا تھا جس دوران انہیں مریضوں کے ورثاء اور ڈیوٹی ڈاکٹرزکی جانب سے سی ٹی اسکین مشین کی خرابی کے بعد درپیش مشکلات اور نجی ادارہ سے سی ٹی اسکین کرانے کی صورت میں بھاری فیسوں کی ادائیگی بارے مریضوں کے ورثاء نے اپنے تحفظات سے آگاہ کیا تھا جبکہ میڈیا پر بھی تسلسل کے ساتھ سی ٹی اسکین کی خرابی کے باعث مریضوں کو درپیش مشکلات کی نشاندہی کی جا رہی تھی۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد کو شیخ زید ہسپتال دورہ کے دوران ایم ایس ڈاکٹر غلا م ربانی نے بتایا کہ ادارہ کی سی ٹی اسکین مشین اپنی مقررہ مدت مکمل کرنے کے بعد خراب ہو چکی ہے جبکہ شیخ زید ہسپتال ٹراما سینٹر کے توسیعی منصوبہ کے تحت نئی جدید سی ٹی اسکین مشین ادارہ کو حکومت کی جانب سے فراہم کر دی گئی ہے تاہم بلڈنگ کی تعمیر نہ ہونے کے باعث نئی مشین تاحال فنکشنل نہیں کی جا سکی۔ڈپٹی کمشنر نے اپنے دورہ کے دوران سی ٹی اسکین مشین کے نئے بلاکس کی تعمیر کیلئے مختص اراضی کا دورہ کرتے ہوئے شیخ زید ہسپتال انتظامیہ کے موقف سے اتفاق نہ کرتے ہوئے کہا کہ نئے بلاکس کی تعمیر پر کئی ماہ کا عرصہ درکار ہے اور اس دوران ہسپتال میں آنے والے مریضوں کو مزید مشکلات سے دوچار رکھنا کسی صورت قابل قبول عمل نہیں ہے۔انہوں نے اس مسئلہ کے حل کیلئے فوری طور پر شیخ زید میڈیکل کالج کے متعلقہ شعبہ کے ہیڈ ڈاکٹر محمد انور، ایکسین محمد ذیغم عباس اور متعلقہ کنٹریکٹر سے میٹنگ کرتے ہوئے مریضوں کو سی ٹی اسکین مشین کی عدم دستیابی کے باعث درپیش مسائل سے آگاہ اور اس کے فوری حل کے لئے دستیاب سی ٹی اسکین مشین کو پرانی عمارت میں انسٹال کرکے فنکشنل کرنے کی تجویز دی جس پر متعلقہ کنٹریکٹرنے ڈپٹی کمشنر کے موقف کی تائید کرتے ہوئے پرانی عمارت میں نئی مشین کو انسٹال کرنے پر آمادگی کا اظہار کیا۔ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے سی ٹی اسکین مشین کی فوری پرانی عمارت میں انسٹالیشن اور مریضوں کو سی ٹی اسکین کی سہولیات فنکشنل کرنے کے لئے محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب اور پرنسپل شیخ زید میڈیکل کالج کو انتظامی موقف سے آگاہ کرتے ہوئے اس پر عملدرآمد کی ضرورت پر زور دیا۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ سی ٹی اسکین کی عدم دستیابی کے باعث مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جس کا فوری حل ضروری ہے اور نئی جدید مشین کی دستیابی کے باوجود نئی عمارت کی تعمیر تک اسے استعمال نہ کرنا شیخ زید ہسپتال خصوصاً مریضوں کے مفاد کے متصادم ہے لہذا ہسپتال انتظامیہ مریضوں کو فوری ریلیف دینے کیلئے نئی مشین پرانی عمارت میں انسٹال کرنے کے اقدام کرے۔

سی ٹی سکین 

مزید : ملتان صفحہ آخر