کاروکاری کا الزام‘ خاتون کو فروخت  کرنیکی کوشش‘ ملزمان کیخلاف مقدمہ درج 

  کاروکاری کا الزام‘ خاتون کو فروخت  کرنیکی کوشش‘ ملزمان کیخلاف مقدمہ درج 

  



جام پور (نامہ نگار) ضلع راجن پور میں ونی۔ وٹہ سٹہ اور کاروکاری سمیت دیگر قبح رسمیں ختم نہ ہو سکیں۔ آج کے جدید دور میں ہر سال ان رسومات کا نشانہ بنتے ہوئے سیکنڑوں خواتین قتل ہوجاتی ہیں۔ جام پور کے نواحی علاقہ حاجی پور میں عورت پر(بقیہ نمبر26صفحہ12پر)

 کاروکاری کا الزام لگا کرکے فروخت کرنے کی کوشش۔ خاتون موقع پر بھاگ نکلنے میں کامیاب ہو کرکے گھر پہنچ گئی۔ ایڈیشنل سیشن جج کے حکم پر ملزمان کے خلاف پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کر دی۔ تفصیل کے مطابق آج کے جدید دور میں راجن پور۔ جام پور کے  علاقہ پچادھ۔ کوہ سلیمان کے پہاڑوں میں لوگ زنانہ جاہلیت کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ ونی۔ وٹہ سٹہ۔ کاروکاری۔ دیگر رسمیں جاری ہیں۔ گزشتہ دنوں جا م پور کے نواحی علاقہ حاجی پور میں نزیر اں مائی دختر رسول بخش ماچھی نے ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں دائر رٹ میں موقف اختیار کیا کہ یاسین ولد رکھا۔ شاہد۔ خان محمد۔ نبی بخش۔ نصر اللہ۔ منظور۔ اعجازوغیرہ ملزمان میں سے ملزم نمبر دو غلام یاسین میرے خاوند کے رشتہ دار ہے جو کہ مجھ پر بری نظر رکھتا ہے۔ ناجائز تعلقات استوار کرنے پر اصرار کرتا۔ میں نے تمام واقعات خاوند کو بتائے۔ جب الزام نمبر دو غلام یاسین سے جھگڑا ہو ا راز فاش ہو نے کے خوف سے ملزم نے پلان ترتیب دینا شروع کر دیے۔ میرے خاوند کے ساتھ تعلقات بڑھا دیے۔ رشتہ داری کی شادی کی تقریب کے لیے میرے خاوند نے کہا چلتے ہیں۔ موٹر سایکل پر بٹھا کرکے مجھے ویران مکان میں لے گئے جہاں پر مجھے کارکاری قرار دیتے ہوئے فروخت کرنے کے منصوبے بنائے جاتے رہے جو کہ میں کمرے میں سنتی رہی۔ موقع پر گھر واپس آگئی تمام حالات واقعات سے اپنے بھائیوں کو بتایا کہ ملزمان کاروکاری کا الزام لگا کرکے فروخت کرنا چاہتے تھے۔ ایڈیشنل سیشن جج کے حکم پر ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ تاہم کوئی ملزم کی گرفتاری نہ ہو سکی۔

مقدمہ درج 

مزید : ملتان صفحہ آخر