پنچائیت کے حکم پر 13سالہ لڑکی سے بداخلاقی میڈیکل رپورٹ میں ثابت

پنچائیت کے حکم پر 13سالہ لڑکی سے بداخلاقی میڈیکل رپورٹ میں ثابت

  



ڈیرہ غازی خان(نمائندہ خصوصی) ٹرائبل ایریا میں کاروکاری کے الزام میں کالا ھونے والے حسین کی تیرہ سالہ بہن امیراں بی بی جسیمبینہ طور پرپنچائیت کے حکم پرزیادتی کانشانہ بنایاگیاتھا کا عدالتی حکم پر میڈیکل چیک اپ، میڈیکل رپورٹ کے بعد ملزمان کے خلاف مقدمہ میں اسلامک لا کی دفعات کے شامل کئے جانے کا امکان،تاھم پنچائیتی فیصلہ کے سرپنچ سمیت تاحال کوئی ملزم گرفتار نہیں کیاجاسکا بااثر افراد کے ایماپر زیادتی کانشانہ بننے والی امیراں کے بھائی باپ اور چچا وغیرہ کے خلاف بھی کالی ھونے (بقیہ نمبر17صفحہ12پر)

والی سونی بی بی کو بھگالیجانے کامقدمہ درج کرلیاگیا واضع رہے کہ تین روز قبل بی ایم پی تھانہ کشوبہ تمن کھوسہ کے علاقہ سے حسین نامی نوجواں عالیانی برادری کے سوناخان کے بیٹے احمد جو ملازمت کے سلسلہ میں اومان گیاھواھے کی بیوی سونی بی بی جوایک بچے کی ماں ھے کو ناجائزتعلقات قائم کرکے بھگالیگیاتھا کی پاداش میں علاقہ کے سرپنچ خدابخش جو سابق چیئرمین یوسی 96 بھی ھے کیحکم پر پنچائیت بلائی گئی جسمیں سرپنچ نے فیصلہ دیاکہ چونکہ نور محمد جسکاتعلق موسانی برادری سے ھے کیبیٹیحسین نے شادی شدہ خاتون کو بھگاکر کال ھونے کا قصور کیا ھے لہزاہ اسکے جرم کی سزا اسکی تیرہ سالہ بہن امیراں کودی جائے لہزاہ اسے پچیس سے تیس افراد نے گھر کاتالہ توڈکر اغواکیا اور پھر انکی موجودگی میں (دینو)نامی ملزم نے اسے زیادتی کانشانہ بنایا اور بچی کو کسی خفیہ مقام پر منتقل کردیا بعدازاں علاقہ میں شورشرابہ اور سوشل میڈیا معاملہ ہائی لائٹ ھونے پر وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے اسکا ایکشن لیتے ھوئے بچی کی فوری بازیابی کاحکم دیا جس پر پولیٹیکل اسسٹنٹ سید موسی رضانے بچی کوبازباب کرواکر ورثاکے حوالے کرنے کی ھدایت کی،بچی کے والد کی تحریری درخواست پر علاقہ مجسٹریٹ حارث منیر سول جج کی عدالت میں پیش کیاگیا جس پر عدالت کے حکم پر اسکامیڈیکل چیک اپ کروایاگیا جسمیں زیادتی ثابت ھوگئی دوسری طرف پولیس بی ایم پی نے مقدمہ تودرج کرلیامگر سرپنچ خدابخش سمیت کسی بھی ملزم کی گرفتاری عمل میں نہ آسکی ھے جبکہ پولیس نے زیادتی کانشانہ بننے والی امیراں بی بی کے بھائی والد اور دیگر رشتہ داروں کے خلاف بھی خاتوں سونی مائی کے اغوا اور زیادتی کا مقدمہ درج کروادیا اب زیادتی کے ملزمان برابری کی بنیاد پر صلح پر مجبور کررہے ہیں مگر تیرہ سالہ امیراں بی بی کے ورثا نے وزیراعلی سردار عثمان بزدار اور سینئر کمانڈنٹ کمشنر نسیم صادق سے مطالبہ کیاھے کہ وہ انصاف کی فراھمی اور ملزمان کی فوری گرفتاری میں انکی مدد کریں تاکہ انہیں انصاف مل سکے۔

بداخلاقی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...