وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم پر بلوچستان کی شکایات جائز، نظام بدلنا ہوگا: سراج الحق 

  وسائل کی غیر منصفانہ تقسیم پر بلوچستان کی شکایات جائز، نظام بدلنا ہوگا: ...

  



خضدار(این این آئی)جماعت اسلامی کے مرکزی امیر سینیٹرسراج الحق نے کہاہے کہ بلوچستا ن کے مسائل کو پارلیمنٹ سمیت ہر فورم پر اٹھائیں گے، قومی دولت کی منصفانہ انداز میں تقسیم نہ ہو نے سے محرمیاں بڑھ جاتی ہیں،بلوچستان کے عوام کو جو شکایت ہے ان کے ازلے کے لئے ضروری ہے کہ ان کی بات صحیح معنوں میں سنی جائے۔ حکومتوں اور افراد کے بدلنے سے معاملات میں تبدیلی نہیں آسکتی، نظام بدلنے سے ہی معاملات بہتر ہوسکتے ہیں،ماضی میں بلوچستان کے عوام کے استحقاق کیلئے جماعت اسلامی نے سب سے زیادہ آواز بلند کی آئندہ بھی کرتے رہیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے خضدار اتحاد کے چیئرمین و قبائلی رہنماء میر اورنگزیب زہری سے ا ن کی رہائشگاہ پر خصوصی ملاقات اوروہاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر خضدار اتحاد کے رہنماء عبدالغفار زہری،شاہد ملازئی اور جماعت اسلامی خضدارکے سابق امیر مولانا محمد اسلم گزگی، جماعت اسلامی خضدار کے امیر مولانا امان اللہ مینگل، جنرل سیکریٹری مولانا عبدالباسط شاہد شاہوانی و دیگر موجود تھے۔خضدار اتحاد کے چیئرمین میر اورنگزیب زہری نے کہاکہ یقینا جماعت اسلامی ایک ملک گیر اور جدوجہد کرنے والی جماعت ہے اور اس جماعت سے ہماری توقعات بھی وابستہ ہیں، سراج الحق جیسے قدآور شخصیت اگر سینٹ میں اس مسئلے کو اٹھاتے ہیں او ر ملوث کرداروں کو قانون کے دائرہ کار میں لاکر سزا دلواتے ہیں تو اس پر اہل بلوچستان آپ کو مدتوں یاد رکھیں گے۔اس موقع پر آل پارٹیز شہری ایکشن کمیٹی کے جنرل سیکریٹری مولانا جاوید منصوری بھی موجود تھے۔ 

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر


loading...