امریکہ ایران کشید گی اور کشمیر میں جو کچھ ہو رہا ہے دنیا کیلئے تباہ کن: گورنر پنجاب 

 امریکہ ایران کشید گی اور کشمیر میں جو کچھ ہو رہا ہے دنیا کیلئے تباہ کن: گورنر ...

  



لاہور(نمائندہ خصوصی)گور نر پنجاب چوہدری محمد سرورنے کہا ہے کہ امر یکہ ایران کشیدگی اور کشمیر میں جو کچھ ہورہا ہے یہ خطے اور دنیا کیلئے تباہ کن ہے پاکستان کسی جنگ کا حصہ نہیں بنے گا۔ دہشت گردی اور انتہائی پسندی عراق حملے کے بعد بڑھی ہے۔اپوزیشن جماعتوں نے آرمی ایکٹ تر میمی بل پر پار لیمنٹ میں اپنا مثبت کردار ادا کیا ہے انشاء اللہ آئندہ بھی قومی اور عوامی ایشوز پر پار لیمنٹ متحد ہی نظر آئے گی۔لاہور سمیت پورے پنجاب میں بوائز سکاؤٹس موومنٹ کو یونیورسٹیز،کالجوں اور سکولوں میں لیکر جا رہے ہیں پنجاب بھر میں 1122بوائز سکاؤٹس کی معاونت کر ے گی۔ وہ جمعرات کے روز گور نر ہاؤس لاہور میں کمشنر بر ائے پنجاب بوائز سکاؤٹس شہر یار سلطان اور صوبائی ایڈ منسٹر بوائز سکاؤٹس پنجاب اور وسیم باری کی پنجاب بوائز سکاؤٹس کی پنجاب بوائز سکاؤٹس الیکشن میں کامیابی کے بعد انکے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے جبکہ اس موقع پر ڈی جی ریسکیو1122ڈاکٹر رضوان نصیر اور دیگر بھی موجود تھے۔ گور نر ہاؤس لاہور میں ہونیوالے پنجاب بوائز سکاؤٹس الیکشن میں لاہور سمیت پنجاب کے تمام اضلاع سے پنجاب بوائز سکاؤٹس کے ضلعی عہدیداران شریک ہوئے۔اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کے دوران گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا کہ پارلیمنٹ میں آرمی ایکٹ ترمیمی بل کے معاملے پر حکومت اور اپوزیشن جماعتیں ایک پیج پر رہی ہیں اور سب نے ملک وقوم کے بہترین مفاد میں معاملے کو خوش اسلوبی سے حل کر لیا ہے مجھے امید ہے کہ سب جماعتوں نے جس طرح اس معاملے میں سمجھداری کا مظاہرہ کیا ہے مستقبل میں بھی قومی اورعوامی ایشوز پر ایسا ہی رویہ اختیار کیا جائیگا اس سے جمہوریت اور پار لیمنٹ بھی مضبوط ہوئی ہے۔ایک سوال کے جواب میں گور نر پنجاب نے کہا کہ مر یم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ عدالت اور وفاقی حکومت کے پاس ہے اور اس کے حوالے سے فیصلہ بھی ان دونوں نے ہی کر نا ہے۔چوہدری محمدسرور نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان پوری دنیا کے سامنے یہ واضح کرچکے ہیں کہ امر یکہ ایران جنگ میں پاکستان کسی کا حصہ نہیں بنے گا بلکہ ہماری پہلے دن سے یہ کوشش ہے کہ امر یکہ اور ایران کے در میان کشیدگی کو کم کیا جائے کیونکہ اگر دونوں ممالک میں جنگ ہوگی تو یہ خطے کیلئے انتہائی تباہ کن ہو گی۔ اْنہوں نے کہا کہ جب عراق پر حملہ کیا گیا تودنیا کو یہ بتایا جاتا رہا ہے کہ صدر صدام حسین کے پاس ایٹمی بم ہے جو دنیا کو چند منٹوں میں تباہ کرسکتے ہیں مگر حملے کے بعد پوری دنیا نے دیکھا کہ وہاں سے کچھ نہیں نکلا مَیں سمجھتا ہوں کہ امر یکہ ایران کشیدگی کا معاملہ بھی سفارتکاری کے ذریعے حل ہونا چاہیے کیونکہ دنیا دونوں ممالک میں جنگ کی کسی صورت متحمل نہیں ہوسکتی سب کی پہلی تر جیح اَمن اور کشیدگی کا خاتمہ ہی ہوناچاہیے۔گورنر پنجاب نے کہا کہ بھارت کشمیر اور بھارتی مسلمانوں کے کیساتھ جو سلوک کر رہے ہیں وہ انسانی حقوق کی بدتر ین خلاف ورزی ہے۔

گورنر پنجاب

مزید : صفحہ آخر