واسا پانی کے چارجز میں کمی کرے: فرایا

واسا پانی کے چارجز میں کمی کرے: فرایا

  



  لاہور (لیڈی رپورٹر)  فیروز پور روڈ انڈسٹریل ایسوسی ایشن کے چیئرمین ملک شاہد محمود، سابق چیئرمین و لاہور چیمبرکے سابق ایگزیکٹو کمیٹی رکن میاں عبدالرزاق اور ملک ریاض اقبال نے واٹر اینڈ سینی ٹیشن اتھارٹی (واسا) پر زور دیا ہے کہ وہ لاہور میں فوری طور پر پانی کے چارجز کم کرے تاکہ تمام شہروں میں یکساں چارجز یقینی بنائے جاسکیں۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ نہ صرف صنعتوں کے لیے پانی کے بھاری ماہانہ چارجز فکس کردئیے گئے ہیں بلکہ لاہور اور فیصل آباد میں پانی کے چارجز میں زمین و آسمان کا فرق بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پانی صنعتوں کا اہم خام مال اور اس کی قیمتوں کے اثرات پیداواری لاگت پر مرتب ہوتے ہیں۔ ملک شاہد محمود اور میاں عبدالرزاق نے کہا کہ لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی لاہور واٹر اینڈ سینیٹیشن ایجنسی نے کچھ عرصہ قبل ایک نوٹیفیکیشن کے ذریعے صنعتوں کے لیے ایک کیوسک کے ٹیوب ویل کی تنصیب پر ایک لاکھ ماہانہ جبکہ آدھے کیوسک کے ٹیوب ویل کی تنصیب پر پچاس ہزار روپے ماہانہ چارجز فکس کردئیے،خواہ صنعتیں پانی استعمال کریں یا نہ کریں۔ دوسری طرف واٹر اینڈ سینی ٹیشن ایجنسی فیصل آباد نے ایک نوٹیفیکیشن کے ذریعے فی کیوسک پانی کا فکسڈ ریٹ 19320روپے مقرر کیا ہے۔ دوشہروں میں پانی کے چارجز میں اس قدر فرق غیر منصفانہ ہے۔ جب چیئرمین واسا کو اس سلسلے میں خط تحریر کیا گیا تو انہوں نے جواب دیا گیا کہ لاہور اور فیصل آباد کے پانی کی کوالٹی میں فرق کی وجہ سے ریٹ مختلف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ جواز بالکل بے بنیاد اور غیرمنصفانہ ہے۔

 انہوں نے امید ظاہر کی کہ صورتحال کا ادراک کرتے ہوئے لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی لاہور واٹر اینڈ سینیٹیشن ایجنسی صنعتوں کی مشکلات میں کمی لانے کے لیے پانی کے چارجز میں کمی اور انہیں دوسرے شہروں کی مطابقت سے مقرر کرے گی۔ 

مزید : کامرس


loading...