ترقیاتی سکیموں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جا ئے، چیف سیکرٹری پنجاب

      ترقیاتی سکیموں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جا ئے، چیف سیکرٹری پنجاب

  



لاہور(لیڈی رپورٹر)عوامی فلاح و بہبود کیلئے شروع کئے جانے والے حکومتی منصوبوں اور سڑکوں کی تعمیر و مرمت  کے کام کو بر وقت مکمل کرنے کیلئے محکمہ مواصلات و تعمیرات کے افسران کو دن رات ایک کرنا ہوگا اور اس مقصد کیلئے حکومت کے محدود وسائل کے باوجود تمام فنڈز فراہم کئے جائیں گے تاکہ  ترقیاتی سکیموں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جا سکے۔ ان خیالات کا اظہار چیف سیکرٹری پنجاب میجر (ر) اعظم سلیمان خان نے محکمہ مواصلات و تعمیرات میں ایک اہم اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سالانہ ترقیاتی پروگرام، نجی شراکت داری کے منصوبوں اور میگا پراجیکٹس کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ اس موقع پر سیکرٹری مواصلات و تعمیرات کیپٹن (ر) اسد اللہ خان نے چیف سیکرٹری کو بتایا کہ مختلف شہروں میں 14سڑکوں کو نجی شراکت داری کے تحت دو رویہ بنانے پر کام جاری ہے اور بڈننگ اور فنڈز سمیت دیگر مراحل مکمل ہونے پر تعمیراتی کام شروع کر دیا جائے گا۔ اس کے علاوہ بلڈنگ سیکٹر میں نارتھ زو ن میں 300جاری اور53  نئی سکیموں کیلئے مختص ساڑھے پانچ ارب روپے میں سے تقریبا ساڑھے تین ارب روپے کے فنڈز جاری کئے جا چکے ہیں،سنٹرل زون میں 289جاری اور90 نئی سکیموں کیلئے مختص نو ارب روپے میں سے پانچ ارب روپے کے فنڈز جاری کر دیئے گئے ہیں اور ساؤتھ زون میں 210جاری اور53نئی سکیموں کیلئے مختص ساڑھے آٹھ ارب روپے میں سے تقریباپانچ ارب روپے کے فنڈز جاری کر دیئے گئے ہیں۔چیف سیکرٹری پنجاب نے ہدایت کی کہ پروکیورمنٹ کے عمل میں شفافیت یقینی بنانے کیلئے محکمہ مواصلات و تعمیرات میں ای ٹینڈرنگ کا نظام جلد از جلد شروع کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کے استعمال سے بد عنوانی کے خاتمے میں مدد ملے گی۔

سیکرٹری موصلات و تعمیرات کیپٹن (ر) اسد اللہ خان نے اجلاس کو بریفنگ میں بتایا کہ محکمے میں ای ٹینڈرنگ کا نظام متعارف کرانے کیلئے معاملات کو حتمی شکل دی جارہی ہے اور جلد اس نظام کا آغاز بطور پائلٹ پراجیکٹ کر دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ 15ارب روپے کی لاگت سے نیا پاکستان 

منزلیں آسان منصوبہ  کے تحت 123کلومیٹر لمبائی کی 174سڑکوں کی تعمیر کا کام تکمیل کے آخری مراحل میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کا دوسرا مرحلہ جلد شروع کر دیا جائے گا۔ چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ اداروں کی کار کردگی بہتر بنانے کیلئے میر ٹ اور شفافیت کو فروغ دینا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ مواصلات و تعمیرات میں دیانت دار، محنتی اور قابل افسران کی کمی نہیں، کرپٹ افسران اور ملازمین کو عہدوں سے ہٹا دیں تاکہ محکمے کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے قابل افسران کی صلاحیتوں سے بھرپور فائدہ اٹھایا جائے اور سب ملکر بطور ٹیم کام کریں۔چیف سیکرٹری نے سیکرٹری مواصلات و تعمیرات کو ہدایت کی کہ محکمہ کی 13غیر منظور شدہ سکیموں کا از سر نو جائزہ لیا جائے اور اگلے سالانہ ترقیاتی پروگرام کیلئے ابھی سے تیاری شروع کردی جائے۔ انہوں نے کہا کہ سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت صوبائی حکومت کے زیادہ تر فنڈز کا استعمال محکمہ مواصلات و تعمیرات کے ذریعے ہی ہوتا ہے اس لئے ترقیاتی سکیموں کے حوالے سے ترجیحات طے کی جائیں اور مفاد عامہ کو مد نظر رکھتے ہوئے نئی سکیموں پر خصوصی توجہ دی جائے۔چیف سیکرٹری نے محکمہ میں عملہ کی کمی کے مسئلے کو حل کرنے کیلئے افسران اور ملازمین کی بھرتی اور سٹریٹیجک اینڈ پلاننگ یونٹ کے قیام سے متعلق بھی ہدایات جاری کیں۔ انہوں نے کہا کہ سڑکوں اور عمارتوں کی تعمیر و مرمت کیلئے ڈیٹا اکٹھا کر کے باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت کام کیا جائے۔ اجلاس میں محکمہ تعمیرات و مواصلات کے تمام ایڈیشنل سیکرٹریز اور 

اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔

مزید : کامرس