وزیر صنعت کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کا رپوریشن بورڈ کااجلاس انتظامی و مالیاتی امور کی منظوری

 وزیر صنعت کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کا رپوریشن بورڈ کااجلاس انتظامی ...

  



 لاہور (لیڈی رپورٹر) صوبائی وزیر صنعت وتجارت میاں اسلم اقبال کی زیر صدارت پنجاب سمال انڈسٹریز کا رپوریشن بورڈ کا 108 واں اجلاس منعقد ہوا۔ پیسک کے دفتر میں تین گھنٹے تک جاری رہنے والے اس اجلاس میں بورڈ نے پیسک کے مالیاتی اور انتظامی امور کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں ڈی جی خان میں رکھ چوٹی دیلانہ کے علاقے میں 50 ایکٹر رقبے پر سمال انڈسٹریل سٹیٹ اور تونسہ شریف میں 16 کنال پر آرٹیزن ویلج کے قیام کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں اخوت کے ذریعے جاری وزیر اعلی خود روزگار سکیم کے امور کا جائز لینے کے لئے سب کمیٹی تشکیل دی گئی۔

  اور یہ کمیٹی سکیم کا تمام پہلوؤں سے جائز ہ لے کر آئندہ دو ہفتوں میں سفارشات پیش کر یگی۔کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں وزیر اعلیٰ خود روزگار سکیم کے حوالے سے مزید فیصلے کیے جائیں گے۔ صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تونسہ شریف میں آرٹیزن ویلج کے قیام سے علاقے کے دستکاروں کواپنے فن کو ترویج دینے میں مدد ملے گی اور اس ویلج کے قیام سے علاقے کے 400  دستکاروں کو سہولت ملے گی۔ صوبائی وزیر نے ہدایت کی کہ کرتارپور کوریڈور کے قریب آرٹیزن ویلج کے قیام کا  بھی جائزہ لیا جائے۔انہوں نے کہا کہ چینوٹ میں بند پڑے فرنیچر ڈئیزائن سنٹر کو چالو کر نے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں اور اگر کہیں پیسک کے مزید ایسے سینٹر بند پڑے ہیں تو انہیں بھی فعال کیا جائے،پیسک کی سمال انڈسٹریل  سٹیٹس میں ترقیاتی کام تیز رفتاری سے مکمل کیے جائیں۔ انکا کہنا تھا کہ انڈسٹریل سٹیٹس کی آباد کاری کیلئے پنجاب سمال انڈسڑیل سٹیٹس پالیسی پر پوری طرح عمل درآمد کیا جائے۔ میاں اسلم اقبال نے کہا کہ لاہور، سیالکوٹ موٹروے پر بھی انڈسٹریل سٹیٹ بنے گی،معاشی سرگرمیوں کے فروغ کے لئے صنعت کاری کے عمل کو تیز کرنا وقت کی ضرورت ہے،معیشت کا پہیہ چلے گا توروزگار کے مواقع بھی پیدا ہونگے اور حکومت کسی صورت معیشت کا پہیہ رکنے نہیں دیگی۔ انہوں نے کہا کہ انڈسٹریل سٹیٹس کی آباد کاری پر پیشرفت کا موثر میکانیزم بنایا جائے۔ سیکرٹری صنعت وتجارت،ایم ڈی پیسک اور بورڈ ممبران نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : کامرس


loading...