صوبائی مشیروں کی تقرری  سماعت  22جنوری تک ملتوی

    صوبائی مشیروں کی تقرری  سماعت  22جنوری تک ملتوی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائیکورٹ  میں وزیراعلی سندھ کے مشیران اور معاون خصوصی کی تقرری سے متعلق درخواست کی سماعت عدالت نے سماعت 22جنوری تک ملتوی کردی۔سندھ ہائی کورٹ میں  وزیر اعلی سندھ کے مشیرا اور معان خصوصی کی تقرری کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی جہاں دوران سماعت عدالت نے استفسار کیا کہ  مرتضی وہاب کے خلاف جو  حکم جاری کیا تھا، اسکی کاپی کہاں ہے، سپریم کورٹ کے حکم نامے  کی کاپی کو  درخواست کا حصہ بنائیں، تمام معاون خصوصی و مشیر کے نوٹیفکیشن بھی عدالت میں پیش کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے  سماعت 22 جنوری تک ملتوی کردی درخواست گزار کا کہنا ہے کہ سندھ کے مشیر اور معاون خصوصی منتخب نمائندوں کے اختیارات استعمال کر رہے ہیں،مشیران اور معاونین خصوصی وزرا کا پورٹ فولیو اور مراعات لے رہے ہیں،مشیر وزیر اعلی مرتضی وہاب وزرات کی مراعات لے رہے ہیں،مرتضی وہاب کو حکومت سندھ نے بلٹ پروف گاڑی دی ہوئی ہے،مرتضی وہاب ترجمان سندھ، مشیر قانون اور مشیر برائے ماحولیات لگایا گیا ہے،مشیران اور معاونین خصوصی کی تقرریاں کالعدم قرار دی جائیں،حکومت سندھ کے مشیر مرتضی وہاب کے علاوہ  اور بھی لوگ ہیں،مشیر مرتضی وہاب کو عدالت کے حکم پر  پہلے عہدے سے ہٹایا گیا تھا، جبکہ انہیں مشیر دوبارہ لگایا گیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر