بنوں،جرگہ کی کوششوں سے  میڈیکل کا طالب علم بازیاب

بنوں،جرگہ کی کوششوں سے  میڈیکل کا طالب علم بازیاب

  



بنوں (بیوروپورٹ)جرگہ کی کوششوں سے پانچ ماہ پہلے خونی واردات کے دوران نورڑ سے اغواء ہونے والے میڈیکل کے طالب علم ڈاکٹر افراسیاب بازیاب کرائے گئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ملک شیرین مالک کی قیادت میں مشران نے افراسیاب کو عوامی ہاؤس بنوں پہنچایا جہاں سے ڈی پی او بنوں یاسر آفریدی نے شیرین مالک اور مشران کے ہمراہ انہیں نورڑ میں اپنے خاندان کے حوالے کیا اس موقع پر صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے ڈی پی او بنوں یاسر آفریدی نے ملک شیرین مالک،حافظ بہادر جان ودیگر مشران کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے مغوی کی بازیابی میں اہم کردار ادا کیا اور کہا کہ مغوی کے خاندان نے جس صبر وتحمل کا مظاہرہ کیا اس پر ہم ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں اور جب تک پولیس اور عوام کا ایک دوسرے کے ساتھ تعاون ہوگا بنوں کے عوام کا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکتا انہوں نے کہا کہ واردات کے دوران ایک شخص قتل بھی ہوا تھا اور اس کیس میں 1ملزمان بھی حراست میں لئے گئے ہیں ابھی انویسٹی گیشن جاری ہیانہوں نے کہا کہ ہمیں اطلاعات ملی تھیں کہ مغوی کو افغانستان منتقل کیا گیا تھا اور مشران نے تاوان ادائیگی کے بغیر مغوی کو مذاکرات کے ذریعے بازیاب کرایا ہے اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ملک شیرین مالک نے بتایا کہ آج انتہائی خوشی کا مقام ہے کہ مغوی اپنے گھر واپس لوٹا ہے جسمیں ملک ضابط خان،حافظ بہادر جان ودیگر مشران سمیت ڈی آئی جی بنوں،ڈی پی او بنوں،حساس ادارے اور ایس پی سی ٹی ڈی نے بھی بھرپور کردار ادا کیا اور قوم کی دعاؤں سے ہمیں یہ کامیابی ملی آج ہمیں اتنی خوشی ملی ہے جیسے ہمارا اپنا بچہ واپس آیا ہو اور اس سے ثابت ہوا کہ جب کوئی کام خلوس نیت سے کیا جائے تو کامیابی ملتی ہے اس موقع پر بازیاب ہونے والے افراسیاب نے کہا کہ میں بنوں پولیسن،مشران اور بنوں کے عوام کو شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے میری بازیابی کیلئے کوششیں کیں اور جسکے نتیجے میں آج میں زندہ سلامت گھر واپس آیا ہوں ورنہ مجھے یقین ہی نہیں تھا کہ میں دوبارہ اپنے خاندان والوں کو واپس آؤں گا آج مجھے انصاف ملا ہے اور یقین ہوگیا ہے کہ پاکستان کے آفسران کسی سے بھی کم نہیں انہوں نے مذید کہا کہ مجھے زخمی حالت میں اغواء کیا گیا تو اغوائیگی کے دوران میرا علاج کیا گیا اور بھرپور خیال رکھا گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر