مہمند،تحصیل حلیم زئی میں ناروا لوڈشیڈنگ،عوام سڑکوں پر

مہمند،تحصیل حلیم زئی میں ناروا لوڈشیڈنگ،عوام سڑکوں پر

  



مہمند(نمائندہ پاکستان) مہمند، تحصیل حلیمزئی کے مختلف علاقوں شاتی کور اور بارو خیل کے عوام کا بجلی کی طویل اور ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف سڑکوں پر احتجاجی مظاہرے۔ علاقے میں نارواں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ نہ کیا گیا تو کسی قسم کے احتجاج سے دریغ نہیں کرینگے۔مظاہرین کا واپڈا کے خلاف شدید نعرہ بازی۔ محکمہ واپڈا عملہ نے دیہاتی علاقوں کی بجلی سپلائی لائنوں کو معطل کرکے ہماری بجلی ماربل فیکٹریوں کو دی جارہی ہے۔مظاہرین کا خطاب۔ تفصیلا ت کے مطابق قبائلی ضلع مہمند تحصیل حلیمزئی میں جمعرات کے روز مختلف علاقوں میں عوام نے بجلی کی طویل اور ظالمانہ لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے۔ تحصیل حلیمزئی کے علاقہ شاتی کور کے نزدیک عوا م نے پشاور ٹو باجوڑ شاہراہ احتجاجاً بند کیا تھااور اسی تحصیل کے علاقہ باروخیل میں عوام نے پاک افغان شاہراہ کو بندکرکے بجلی لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ اس موقع مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے محترم، شوکت، ملک نذیر، ملک ماہ گل، ملک حمید و دیگر نے کہا کہ محکمہ واپڈا غلنئی کے عملہ نے علاقے میں کئی مہینوں سے ظالمانہ اور طویل لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رکھا ہواہے جس کے باعث علاقے میں پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے اوران کا کوئی پرسان حال نہیں کیونکہ دیہاتی علاقوں کو شب وروز میں آدھے گھنٹے بجلی سپلائی ہوتی ہے۔ اس سلسلے میں علاقے کے عوام نے الزام لگا یا کہ علاقے میں طویل لوڈشیڈنگ کی بنیادی وجہ سٹیل اور ماربل کی فیکٹریاں ہیں جب سے یہ فیکٹریا ں بنی ہے تو دیہاتی علاقوں کی بجلی بالکل غائب ہوگئی ہے۔ اسطرح واپڈا کے اہلکار ان فیکٹریوں مالکان سے ساز باز کرکے ان کو لوڈشیڈنگ سے بچنے کیلئے دیہاتوں کو بجلی فراہم کرنے والے لائنوں سے بجلی فراہم کی جاتی ہے جو کہ علاقے کے عوام کے ساتھ سراسر ظلم و ناانصافی ہے۔ بعدازاں مظاہرین نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرسید سیف الاسلام، اے سی اپر مہمند حامد اقبال اور واپڈا اہلکاروں کی یقین دہانی پر احتجاج ختم کرکے روڈ کو ٹریفک کیلئے کھول دیا۔

مزید : صفحہ اول