بچوں کے گرم کپڑوں کی فرمائش باپ کیلئے موت بن گئی

بچوں کے گرم کپڑوں کی فرمائش باپ کیلئے موت بن گئی
بچوں کے گرم کپڑوں کی فرمائش باپ کیلئے موت بن گئی

  



کراچی (ویب ڈیسک) شہر قائد میں سردی کے سبب بچوں کے گرم کپڑوں کی فرمائش باپ کے لیے موت کی وجہ بن گئی، مفلس باپ نے بچوں کی فرمائش پوری نہ کرنے پر مایوس ہوکر خودکشی کرلی۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز قریبی قبرستان میں خود کو پٹرول چھڑک کر آگ لگا کر خودکشی کی کوشش کرنے والا کورنگی ابراہیم حیدری کا رہائشی 35 سالہ میر حسن دوران علاج زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا۔ میر حسن کو زخمی حالت میں سول ہسپتال برنس وارڈ منتقل کیا گیا تھا، ہسپتال انتظامیہ کے مطابق میر حسن کو جب ہسپتال لایا گیا تو اس کے جسم کا 60 فیصد حصہ جھلسا ہوا تھا،متوفی کی اہلخانہ نے بتایا کہ میر حسن 3 ماہ سے بے روزگار تھا اور مہنگائی سے تنگ تھا۔

انہوں نے بتایا کہ مزدور میر حسن سے بچوں نے سردی سے بچنے کے لیئے گرم کپڑوں کی فرمائش کی جو وہ پوری نہ کرسکا اور دلبرداشتہ ہوکر خودسوزی کی۔اہلخانہ کے مطابق میر حسن گدھا گاڑی چلاکر گزر بسر کرتا تھا اور پچھلے تین ماہ سے بیروزگار تھا،متوفی نے سوگواروں میں 1 بیوہ اور 5 بچوں کو چھوڑا ہے۔ میر حسن نے مرنے سے قبل ایک نوٹ لکھا جس میں وزیر اعظم سے اپیل کی کہ اہل خانہ کو گھر اور روزگار فراہم کیا جائے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...