تہران کے قریب تباہ ہونے والے طیارے کی خاتون مسافر جسے جہاز میں بیٹھنے سے قبل ہی اس کا خوفناک انجام معلوم ہوگیا

تہران کے قریب تباہ ہونے والے طیارے کی خاتون مسافر جسے جہاز میں بیٹھنے سے قبل ...
تہران کے قریب تباہ ہونے والے طیارے کی خاتون مسافر جسے جہاز میں بیٹھنے سے قبل ہی اس کا خوفناک انجام معلوم ہوگیا

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایران میں گزشتہ دنوں یوکرین ایئرلائنز کا ایک طیارہ گر کر تباہ ہو گیا تھا۔ اس جہاز میں سوار ایک خاتون کے شوہر نے انکشاف کیا ہے کہ اس خاتون نے طیارے میں سوار ہونے سے قبل ہی اس کا خوفناک انجام بھانپ لیا تھا۔ میل آن لائن کے مطابق اس کینیڈین خاتون کا نام شیدا شادخو (Sheyda Shadkhoo) تھا جس کے شوہر حسن کا کہنا ہے کہ جہاز میں سوار ہونے سے قبل اس کی بیوی نے اسے فون کیا اور جہاز کی سیفٹی کے متعلق بات کی۔

حسن کا کہنا تھا کہ ”شیدا نے سفر شروع ہونے سے قبل مجھے کال کی۔ وہ بہت فکر مند لگ رہی تھی۔ اس نے مجھے کہا کہ ’مجھے ایسے لگتا ہے جیسے کچھ برا ہونے والا ہے۔“ رپورٹ کے مطابق حسن کو کال کرنے کے بعد شیدا نے اپنے انسٹاگرام پر اپنی ایک ’گڈبائے‘ سیلفی بھی پوسٹ کی جس کے ساتھ اس نے ایسی نظم لکھی کہ جس سے ظاہر ہوتا تھا کہ شاید یہ اس کی آخری سیلفی ہو۔ رپورٹ کے مطابق اس حادثے میں 176افراد ہلاک ہوئے جن میں 63کینیڈین، 11یوکرینی، 10سویڈش، 4افغانی، 3جرمن، 3برطانوی اور دیگر ممالک کے شہری شامل تھے۔

واضح رہے کہ امریکہ اور دیگر مغربی ممالک کی طرف سے ایران پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ اس نے اس طیارے کو گرایا۔ گزشتہ رات ایک ایسی مبینہ ویڈیو بھی منظرعام پر آئی ہے جس میں دو میزائلوں کو اس طیارے کو نشانہ بناتے دکھایا گیا ہے۔ بہرحال ایران کی طرف سے ان دعوﺅں کی سختی سے تردید کی جا چکی ہے۔ ایران کا کہنا ہے کہ مغربی ممالک نفسیاتی جنگ کے حربوں کے طور پر مسافر طیارے کی تباہی کا الزام ایران پر ڈال رہے ہیں۔

مزید : برطانیہ


loading...