اب آپ اپنے نازک اعضاءکی تصاویر ڈاکٹروں کو بھیج سکتے ہیں، سہولت متعارف کروادی گئی

اب آپ اپنے نازک اعضاءکی تصاویر ڈاکٹروں کو بھیج سکتے ہیں، سہولت متعارف کروادی ...
اب آپ اپنے نازک اعضاءکی تصاویر ڈاکٹروں کو بھیج سکتے ہیں، سہولت متعارف کروادی گئی

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) مردوخواتین کسی جنسی بیماری میں مبتلا ہوں تو شرم کے مارے بھی ڈاکٹر کے پاس نہیں جاتے۔ اب ایسے لوگوں کے لیے ایک حیران کن سروس متعارف کروا دی گئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ’آن لائن ایس ٹی آئی چیکر‘ کے نام سے یہ سروس متعارف کروائی ہے جس میں آپ عضو مخصوصہ کے تصویر ای میل کے ذریعے ڈاکٹروں کو بھجوا سکتے ہیں اور وہ اس تصویر کے ذریعے آپ کو بتا دیں گے کہ خدا نخواستہ آپ کہیں ہرپس، جینیٹل وارٹس، پبک لیس اور دیگر جنسی امراض میں سے کسی کا شکار تو نہیں ہیں۔

اس سروس کی فیس 160پاﺅنڈ (تقریباً 32ہزار روپے)رکھی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق یہ سروس ’بیٹر ٹو نو‘ (Better2Know)نامی پرائیویٹ سیکسوئل ہیلتھ ٹیسٹنگ پروائیڈر نے متعارف کروائی ہے۔ ڈاکٹر تصویر میں مریضوں کے عضو مخصوصہ کا معائنہ کرنے کے بعد فون پر ان سے بات کریں گے اور انہیں ان کے مرض کے متعلق بتائیں گے۔ اس فیس صرف مریضوں کا ٹیسٹ کیا جائے گا، علاج اس میں شامل نہیں ہو گا۔بیٹر ٹو نو کی شریک بانی انتھیا موریس کا کہنا ہے کہ ”ہم امید کرتے ہیں کہ اس سروس سے لوگوں کی جنسی صحت بہتر ہو گی اور وہ گھر بیٹھے بروقت خطرناک جنسی امراض کی تشخیص کرکے ان کا علاج کروا سکیں گے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...