نیب میں کیا نقائص تھے ؟ تحریک انصاف کے رہنما کی نشاندہی

نیب میں کیا نقائص تھے ؟ تحریک انصاف کے رہنما کی نشاندہی
نیب میں کیا نقائص تھے ؟ تحریک انصاف کے رہنما کی نشاندہی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تحریک انصاف کے رہنما ہمایوں اختر خان نے کہاہے کہ نیب قانون میں کچھ نقائص ہیں جیسے بیورو کریسی کے خلاف بلاوجہ کارروائی ہورہی تھی جس کی وجہ سے اس نے کام روک دیا ، ہم نیب کے نقائص دور کرنے کی بات کررہے ہیں ، نیب کوختم کرنے کی بات نہیں کررہے ۔

سماءنیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ہمایو ں اختر خان نے کہا کہ جوآرڈیننس پاس ہوئے وہ قومی اسمبلی میں لائے گئے ہیں ، کچھ منظور ہوگئے ہیں اورکچھ پر کام ہورہاہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں نوکریاں پیدا کرنے کیلئے پرائیویٹ انڈسٹری میں اضافہ کرنا ہوگا ۔اس وقت ہماری بر آمد بڑھ رہی ہے اورزر مبادلہ کے ذخائر بڑھ رہے ہیں ، ہم کواب ڈالر کی ضرورت نہیں رہی ۔

ہمایوں اخترخان کا کہناتھاکہ 2020کاسال مدینہ کی ریاست کے اقدامات کرنے کاسال ہوگا ، نوکریاں ملیں گی اورپاکستان کی معیشت کے از سر نو مستحکم ہونے کا سال ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ نیب قانون میں کچھ نقائص ہیں جیسے بیورو کریسی کے خلاف بلاوجہ کارروائی ہورہی تھی جس کی وجہ سے اس نے کام روک دیا ، ہم نیب کے نقائص دور کرنے کی بات کررہے ہیں ، نیب کوختم کرنے کی بات نہیں کررہے ، کرپشن روکنے اور احتساب کرنے کیلئے یہ ایک اچھا ادارہ ہے ۔

مزید : قومی