بریکنگ نیوز

بریکنگ نیوز
بریکنگ نیوز

  


حسب معمول صبح صبح اخبارات اٹھائے اور بغور مطالعہ شروع کیا ، اور جیسے جیسے اخبار پڑھتے گئے بے چینی میں اضافہ ہو تا گیا ، جی ہاں یہ بھی عجیب بات ہے کہ جب اخبار پڑھ لیں تو بھی بے چینی ہوتی ہے اور اگر اخبار نہ پڑھیں تو بھی بے چینی سی رہتی ہے ۔ حقیقت تو یہ ہے کہ اخبار کے مطالعے سے دنیا بھر کی معلومات بھی ملتی ہیں ، تاہم اخبارات میں آئے روز بے شمار قسم کی سیاسی غیر سیاسی ، مذہبی ، سماجی ،جرائم پر مبنی خبریں بھی ملتی ہیں۔ لکھنے کے لئے کچھ نہ کچھ مرچ مصالحہ بھی مل جاتا ہے ، تاہم صبح صبح بھی لکھنے کے موڈ سے اخبارات اٹھائے تو سب سے پہلی نظر جس خبر پر پڑی وہ یہ تھی کہ اسلام آبا دمیں فاضل عدالت نے بلدیاتی الیکشن کا شیڈول مسترد کرتے ہوئے نیا شیڈول جاری کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت کی طرف سے تین اگست تک بلدیاتی انتخابات کا نیا شیڈول پیش کرنے کا حکم دے دیا گیا،جس کے بعد اسلام آباد میں پچیس جولائی کو منعقد ہونے والے انتخابات منسوخ تصور ہو گئے ، جی ہاں یہ خبر بریکنگ نیوز کے طور سے تمام ٹی وی چینلز نے بھی چلائی تھی ، اس خبر سے جہاں ملک بھر کے عوام میں بے چینی پھیل گئی وہاں پر بلدیاتی امیدواروں کی ہوائیاں بھی اڑ گئی ہیں، بہت سے امیدواروں کے دل ٹوٹ گئے، جی ہاں بہت سے امیدوار تو یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ یہ سب ڈرامہ ہے، حکومت بلدیاتی انتخابات میں سنجیدہ نہیں ،کہا جا رہا ہے کہ اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات سے متعلق قانون واضح نہیں ، ابھی قانون سازی کی ضرورت ہے۔

یہ بات بھی غلط نہیں کہ کبھی اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات ہوئے ہی نہیں ، او ر اسلام آباد کی تاریخ میں پہلی دفعہ بلدیاتی انتخابات ہو رہے ہیں اس لئے اسلام آباد کے عوام میں بھی جوش و خروش نمایاں دیکھنے میں نظر آرہا ہے ، اسلام آباد شہر کی گلیوں محلوں میں امیدواروں کی تصاویر اور رنگا رنگا بینروں نے تو اسلام آباد جیسے شہر کا نقشہ ہی بدل دیا ، تاہم اگر بات کی جائے قانونی پیچیدگیوں کی تو پنجاب میں بھی دو دفعہ انتخابات کی تاریخ کا اعلان ہوا ، دو دفعہ کاغذات نامزدگی جمع ہوئے لیکن دو دفعہ ہی انتخابات ملتوی ہو گئے ، اور اب اسلام آباد میں بھی بلدیاتی انتخابات آخری مراھل میں تھے کاغذات نامزدگی کا مرحلہ بھی مکمل ہو چکا تھا ۔

اب اچانک ہی اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات مو خر کر دئیے گئے ،بہر حال خاصی تشویشناک صورتحال ہے جس کا ہر حال میں حکومت کو تدارک کرنا ہو گا ، تاہم پنجاب میں بھی بلدیاتی انتخابات منعقدنہ ہونے کی یہی وجہ ہے کہ حلقہ بندیاں اور نقشہ جات بھی الیکشن کمیشن کا عملہ تاحال مکمل نہیں کر سکا ،بہر حال اب دیکھنا تو یہ بھی ہے کہ موجودہ حکومت اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات منعقد کروا سکے گی تاکہ اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات کے بعد پنجاب اور سندھ میں بھی بلدیاتی انتخاب کا مرحلہ مکمل ہو سکے اور کب تلک ایسا ہوسکے گا کچھ خبر نہیں ، جی ہاں فی الوقت اس بارے تو کچھ نہیں کہہ سکتے لیکن فی الحال آپ سے اجازت تو لے سکتے ہیں تو جی دوستو ملتے ہیں آپ سے ایک بریک کے بعد تو چلتے چلتے اللہ نگھبان رب راکھا،،،،

مزید : کالم


loading...