القسام نے مجاہدین کے ہاتھوں تباہ اسرائیلی ٹینک کو جنگ کی یادگار قرار دیدیا

القسام نے مجاہدین کے ہاتھوں تباہ اسرائیلی ٹینک کو جنگ کی یادگار قرار دیدیا

غزہ (این این آئی) القسام بریگیڈ نے غزہ کی پٹی پر مسلط اسرائیلی جنگ کا ایک سال مکمل ہونے پر اسرائیلی فوج کے مجاہدین کے ہاتھوں تباہ ہونیوالے ٹینک کو جنگ کی یاد گار قرار دیاہے ،القسام نے جدید آلات اور ٹیکنالوجی کے ذریعے دو نئے میزائل تیار کرنے کا بھی دعویٰ کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق القسام بریگیڈ کی جانب سے غزہ ک پٹی پر جولائی اور اگست 2014 ء کو مسلط کی گئی جنگ کو ایک سال پورا ہونے پر ایک یادگاری تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب کے دوران اسرائیل کا فلسطینی مجاہدین کے ہاتھوں تباہ ہونیوالے ٹینک میرکافا کو جنگ کی یاد گار قرار دیتے ہوئے اسے وسطی غزہ میں فلسطین گراؤنڈ میں نصب کیا گیا۔تقریب میں حماس کی قیادت کے علاوہ القسام بریگیڈ کے ترجمان ابو عبیدہ، ہزاروں شہر اور القسام کے سینکڑوں کارکن موجود تھے۔وسطی غزہ میں اسرائیلی فوج کے غزہ جنگ میں تباہ ہونے والے ٹینک میرکافا کی تنصیب کے بعد اس کے اطراف میں آہنی باڑ لگائی گئی۔ ٹینک کے اطراف میں مجاہدین کے ہاں یرغمال بنائے گئے فوجی شاؤن ارون کا نام لکھا گیا۔بیان میں بتایا گیا ہے کہ تنظیم کے ماہرین نے دو نئے میزائل تیار کیے ہیں جو ماضی میں تیارکیے گئے میزائلوں کی نسبت نہ صرف طویل دور تک مار کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں بلکہ جدید آلات سے بھی آراستہ ہیں۔القسام بریگیڈ کے ترجمان نے غزہ جنگ کی یادگاری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسرائیل کو خبردار کیا کہ وہ غزہ کی پٹی پر حملے کی حماقت نہ کرے ورنہ اسے اس کے سنگین نتائج بھگتنا پڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ماہرین نے دو نئے میزائل تیار کیے ہیں جنہیں تنظیم کے اسلحہ کا حصہ بنایا جا رہا ہے۔ابو عبیدہ نے کہا کہ غزہ جنگ میں صہیونی دشمن نے فلسطینی مجاہدین کی جو مزاحمتی دیکھی وہ اس کے مقابلے میں کچھ بھی نہیں جو آنیوالے عرصے میں دیکھی جائیگی۔ انہوں نے کہا کہ مجاہدین نے جنگ کے اصول بدل دیئے ہیں، اب ہم ان رکاوٹوں کو بھی عبور کرچکے ہیں جن کے ہوتے ہوئے ہم اپنے دفاع میں پیچھے رہ جاتے تھے۔ اب ہم سے پہلے ہمارے دشمن کو ہماری فتح ماننا پڑیگی۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی عوام ان تمام چہروں کو مسخ کریں گے جو غزہ کے عوام پرمحاصرے کا عذاب مسلط کیے ہوئے ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...