جہیزواپسی کا مقدمہ ،اشتہاری تعاقب پر سیشن عدالت سے گرفتار

جہیزواپسی کا مقدمہ ،اشتہاری تعاقب پر سیشن عدالت سے گرفتار

لاہور(نامہ نگار)سول جج کی عدالت کے بیلف نے جہیزواپسی کے مقدمہ میں ملوث 2سال سے اشتہاری ملزم مختار احمدکوتعاقب کرکے سیشن عدالت سے گرفتار کرلیا ،مختاراحمد اپنی بیوی کے قتل کے استغاثے میں پیشی کے لئے سیشن کورٹ آیا ہواتھا۔استغاثہ کے مطابق مختار پر الزام ہے کہ اس نے اپنی بیوی سلامت بی بی کو زندہ جلا دیا تھا، ملزم کے خلاف مقتولہ کی والدہ نے جہیز واپسی کا کیس سول جج میمونہ لاشاری کی عدالت میں دائر کررکھا ہے جبکہ ملزم کے خلاف ایک دوسرا قتل کامقدمہ ایڈیشنل سیشن جج ناصرجاوید کی عدالت میں زیرسماعت ہے ،ملزم مختارجہیز کیس میں عدالت نے مختار کے خلاف ڈگری جاری کی جس کے بعد وہ مفرورہوگیا تھااور 2 سال تک غائب رہا،سول جج کے عدالتی بیلف نے ملزم کو سیشن کورٹ میں قتل کے استغاثے کی سماعت کے موقع پرگرفتارکیا،واضح رہے کہ ملزم پیشی کے وقت منہ پر کپڑا ڈال کر عدالت میں پیش ہوا تھا جہاں سے اس نے بیلف کے جانب سے حراست میں لینے پر بھاگنے کی کوشش کی جس کے بعد بیلف نے ملزم کا تعاقب کرتے ہوئے اسے گرفتار کرلیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...