سی اینڈ ڈبلیو انتظامیہ کے بیرون ملک دورے ،خزانے کو لاکھوں کا نقصان

سی اینڈ ڈبلیو انتظامیہ کے بیرون ملک دورے ،خزانے کو لاکھوں کا نقصان

لاہور(شہبا ز اکمل جندران//انوسٹی گیشن سیل) سی اینڈڈبلیو کی انتظامیہ قومی خزانے کوبے دریغ لٹانے لگی۔ 15دنوں میں دو ملکوں کے الگ الگ دوروں سے قومی خزانے کو 40لاکھ روپے سے زائد نقصان کا سامناہے۔ سرکاری فنڈز سے پرائیویٹ افراد کو بیرون ملک دورے کروانے پر انگلیاں اٹھنے لگیں۔محکمے کے صوبائی سیکرٹری نے رواں ماہ کے ابتدائی دنوں میں ترکی کا دورہ کیا جبکہ 13جولائی سے چین کو دورہ کررہے ہیں۔معلوم ہواہے کہ ان دنوں سی اینڈبلیو کی انتظامیہ پر بیرون ملک دوروں کی دھن سوار ہے۔یہ دورے عوام کے پیسوں اور سرکاری فنڈز سے کئے جارہے ہیں۔جبکہ دوروں میں ٹھیکیداری کرنے والے چہیتے پرائیویٹ افراد کو بھی نواز اجانے لگا ہے۔بتایا گیا ہے کہ سیکرٹری سی اینڈڈبلیو پنجاب میاں مشتاق احمد نے رواں ماہ کے ابتدائی دنوں میں ترکی کا دورہ کیا۔ جس میں ان کے ہمراہ انجنئیروں کے علاوہ نیسپاک کا ایک کنسلٹنٹ اور بعض ٹھیکیدار بھی تھے ۔پانچ جولائی کو یہ ٹیم چین سے واپس آئی ۔اور اب 13سے 17جولائی تک چین جانے کی تیاری کی جارہی ہے۔جس میں صوبائی سیکرٹری کے ہمراہ وزیر اعلیٰ کے سیکرٹری ٹو چیف منسٹر احمد جاوید قاضی۔سپرنٹنڈنٹ انجنئیر ہائی ویز لاہور سرفراز بٹ،سپرنٹنڈنٹ انجنئیر ہائی ویز بہاولپور محسن شکور، ڈپٹی سیکرٹری ھائی ویز عامر رضا ہونگے۔ جبکہ سی اینڈڈبلیو کے صوبائی وزیر تنویر اسلم ملک کے چین جانے کی اطلاع بھی ہے۔ذرائع کا کہناہے کہ بیرون ملک دوروں پرانجنئیر زکو بھیجنا تو سمجھ میں آتا ہے لیکن نان ٹیکنیکل اہلکاروں کا ترکی یا چین جا کر سٹرکوں ، پلوں اور انفراسٹرکچر کا معائنہ کرنا بے سود ہے۔انجنئیروں کے بعض حلقوں کی طرف سے یہ بھی اعتراض سامنے آیا ہے کہ عوام کے پیسے سے ٹھیکیداروں کو وزٹ کیوں کروائے جارہے ہیں۔اور سینکڑوں ٹھیکیداروں میں سے چار یا پانچ ٹھیکیداروں کے چناؤ کے لیے میرٹ کیا رکھا گیا۔بتایا گیا ہے کہ چین کے دورے پر 22لاکھ روپے خرچ ہونگے ۔ اسی طرح ترکی کے دورے پر بھی 20لاکھ روپے سے زائد اخراجات آچکے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...