بھارت نے دریائے توی میں پانی چھوڑ دیا، سیالکوٹ کے کئی دیہات زیر آب

بھارت نے دریائے توی میں پانی چھوڑ دیا، سیالکوٹ کے کئی دیہات زیر آب
بھارت نے دریائے توی میں پانی چھوڑ دیا، سیالکوٹ کے کئی دیہات زیر آب

  


اسلام آباد، سیالکوٹ (ویب ڈیسک) بھارت کی جانب سے پانی چھوڑنے سے سیالکوٹ میں متعدد سرحدی علاقے زیر آب آگئے۔ سیالکوٹ کے سرحدی علاقہ چپراڑ سے منسلک دریائے توی میں گزشتہ روز بھارت نے پانی چھوڑ دیا جس کے باعث پتوال، جھمیاں، صالح پور سمیت ملحقہ سرحدی عیہات زیر آب آگئے، پانی سینکڑوں ایکڑ پر کاشت فصلوں میں داخل ہوگیا۔ لوگوں نے مویشیوں سمیت محفوظ مقامات کی طرف نقل مکانی شروع کردی۔ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے کسی قسم کی مدد فراہم نہیں کی گئی۔ فوکل پرسن ڈسٹرکٹ فلڈ کنٹرول ملک عابد اعوان کے مطابق چپراڑ کے دیہات نشیبی ہیں اور دریائے توی میں چپراڑ کے مقام پر سیلابی پانی کا بہاﺅ 15 ہزار کیوسک ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں جاری شدید بارشوں کی وجہ سے دریائے چناب اور توی میں پانی کی سطح مسلسل بلند ہورہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیلاب کی صورتحال مکمل کنٹرول میں ہے۔ علاوہ ازیں دریائے چناب میں 1 لاکھ 51 ہزار 988 کیوسک پانی جبکہ نالہ ڈیک میں 13 ہزار کیوسک پانی آنے سے درمیانے درجے کا سیلاب ہے۔ مریدکے میں برساتی نالہ ڈیک، نالہ بھیڑ اور لیلہ اورمیں طغیانی کی وجہ سے درجنوں دیہات میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے لوگوں نے قیمتی سامان اور جانور محفوظ مقامات پر منتقل کرنا شروع کردئیے، ضلعی انتظامیہ نے فلڈ وارننگ جاری کردی۔ علاوہ ازیں راولپنڈی، اسلام آباد میں دن بھر وقفے وقفے سے جاری بارش سے نشیبی علاقوں میں گلیاں، محلے تالاب اور ندی نالوں کی صورت اختیار کرگئے، نالہ لئی میں پانی کی سطح 7 فٹ تک بلند ہوگئی، ضلعی انتظامیہ نے فلڈ وارننگ جاری کردی۔ نالہ لئی کے کناروں پر آباد گھروں کو خالی کرالیا گیا۔ راولپنڈی میں منگل کو ریس کورس کے برساتی نالے میں بہہ جانے والے نیوز فوٹوگرافک حنیف خٹک کے چوبیس سالہ بیٹے عاطف کی نعش نالے سے نکالی گئی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق آج جمعہ اور کل ہفتہ کے روز ملک کے بالائی علاقوں اسلام آباد، راولپنڈی، لاہور، گوجرانوالہ، ہزارہ ڈویژن اور کشمیر میں مون سون بارشوں میں شدت کا امکان ہے۔

مزید : اسلام آباد


loading...