سانگلا ہل ، بر جیس طاہر ، بلال ورک ، طارق باجوہ میں کانٹے دار مقابلہ متوقع

سانگلا ہل ، بر جیس طاہر ، بلال ورک ، طارق باجوہ میں کانٹے دار مقابلہ متوقع

سانگلاہل(تحصیل رپورٹر)قومی اسمبلی کے حلقہ 117ننکانہ ون میں 3لاکھ96ہزار 839ووٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے،جن میں 2لاکھ 24ہزار116 مرد اور ایک لاکھ72ہزار723 خواتین شامل ہیں،انتخابی عمل کیلئے 323پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے،895پولنگ بوتھ بنائے گئے،جن 501مرد اور 394خواتین کیلئے ہونگے، 323پریزائیڈنگ آفیسر،1790اسسٹنٹ پریزائیڈنگ آفیسر اور895پولنگ آفیسر تعینات کئے گئے ہیں، ریٹرننگ آفیسر این اے 117 ایڈیشنل سیشن جج ننکانہ حامد حسین نے 11 امیدواروں کوانتخابی نشان الاٹ کئے ہیں،جن میں مسلم لیگ ن کے سابق وفاقی وزیر امور کشمیر،گلگت بلتستا ن چوہدری محمدبرجیس طاہر ،تحریک انصاف کے چوہدری بلال احمد ورک سابق ایم این اے ،آزاد امیدوارچوہدری طارق محمود باجوہ سابق ایم پی اے ،تحریک لبیک کے محمد رضوان واہگہ ،پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرین کے محمد وقاص ،اللہ اکبر تحریک کے ڈاکٹرہارون اشفاق ،آزاد امیدوار اکرم حیات چیمہ،شفقت رسول گھمن ،محمد اعظم ملک،نعیم اقبال اوروقاص احمد ورک شامل ہیں،برجیس طاہر،بلال احمد ورک،طارق محمود باجوہ،محمد رضوان واہگہ ،محمداکرم حیات چیمہ،ڈاکٹرہارون اشفاق اور محمد وقاص نے انتخابی مہم شروع کر رکھی ہے،مگر اب تک کی صورتحال کے مطابق برجیس طاہر،بلال احمد ورک،طارق محمود باجوہ میں کانٹے دار مقابلہ کا امکان ہے،امیدوار عوامی ہمدردیاں حاصل کرنے کیلئے ایڑی چوٹی کا زور لگا رہے ہیں،جوڑ توڑ بھی عروج پر پہنچ گیا ہے،طارق باجوہ نے منفرد انداز میں انتخابی مہم شروع کر رکھی ہے،ان کے سپورٹرز کے درجنوں گروپ ڈور ٹو ڈور رابطہ کر رہے ہیں،جبکہ خواتین بھی انتخابی مہم میں حصہ لے رہی ہیں۔

مزید : علاقائی