نوشہرہ ورکاں: پی پی 64.63کا دنگل ، 32امیدواروں میں مقابلہ ہو گا

نوشہرہ ورکاں: پی پی 64.63کا دنگل ، 32امیدواروں میں مقابلہ ہو گا

نوشہرہ ورکاں (نمائندہ خصوصی) صوبائی اسمبلی کا حلقہ پی پی 63 گوجرانوالہ 13 میں قانونگوئی نوشہرہ ورکاں کے پانچ پٹوار سرکل ہردوارتالی منگوکی ماڑی بھنڈارں خان مسلمان اور مٹوبھائیکے بڈھا گورائیہ قانونگوئی مکمل تحصیل گوجرانوالہ صدر کے پٹوار سرکل کوہلووالہ, منڈیالہ میر شکاراں اور میونسپل کارپوریشن گوجرانوالہ کے چارج نمبر 22 کا سرکل 15 ایمن آباد قانوگوئی کے پٹوار کرن والی مہیسن میلووالہ نندپور اور تتلے مالی نکال کر باقی قانوگوئی شامل ہے اس حلقہ کی کل آبادی 3 لاکھ 58 ہزار 3 سو 6 نفوس پر مشتمل ہے۔ اس حلقہ میں ووٹرز کی کل تعداد 1 لاکھ 72 ہزار 5 سو 11 ہے جن میں مردانہ ووٹر کی تعداد 1 لاکھ 2 ہزار 13 اور خواتین ووٹر کی تعداد 70 ہزار 4 سو 98 ہے حلقہ پی پی 63 کی پولنگ اسکیم کے مطابق اس مکمل حلقہ کو حساس قرار دیا گیا ہے اس حلقہ میں 121 پولنگ اسٹیشن جن میں 343 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں جن میں مردانہ پولنگ بوتھ کی تعداد 191 اور زنانہ پولنگ بوتھ کی تعداد 152 ہو گی اس حلقہ کا ریٹرننگ آفیسر عمردراز ہرل سول جج نوشہرہ ورکاں کو مقرر کیا گیا ہے حلقہ پی پی کی نشست پر 15 امیدواروں میں مقابلہ ہو گا جن میں 5 سیاسی پارٹیوں کے امیدوار جن میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے نامزد امیدوار چوہدری محمد اقبال گوجر سابق ایم پی اے پاکستان تحریک انصاف کے رانا عمر نذیر سابق ایم این اے تحریک لبیک پاکستان کے چوہدری شہباز احمد گورائیہ ملی مسلم لیگ (اللہ اکبر تحریک) کے چوہدری محمد یونس مہر برابری پارٹی پاکستان کے نثار احمد شامل ہیں جبکہ 10 آزاد امیدواروں میں قابل ذکر ذوالفقار بٹ محترمہ صغری عائشہ چوہدری امیر حمزہ امانت ورک شامل ہیں ابتک کی صورت حال کے مطابق اصل مقابلہ مسلم لیگ (ن) کے چوہدری محمد اقبال گوجر سابق ایم پی اے اور پاکستان تحریک انصاف کے رانا عمر نذیر سابق ایم این اے کے درمیان متوقع ہے جبکہ ذوالفقار احمد بٹ اور چوہدری امیر حمزہ امانت ورک بھی اپ سیٹ کر سکتے ہیں اسی طرححلقہ پی پی 64 گوجرانوالہ 14 میں قانونگوئی نوکھر قانوگوئی چوہدری چک قانونگوئی نوشہرہ ورکاں کے پانچ پٹوار سرکل ہردوارتالی منگوکی ماڑی بھنڈارں خان مسلمان اور مٹوبھائیکے نکال کر باقی قانوگوئی اور میونسپل کمیٹی نوشہرہ ورکاں پر مشتمل ہے۔ اس حلقہ کی کل آبادی 3 لاکھ 50 ہزار 6 سو 85 نفوس پر مشتمل ہے۔ اس حلقہ میں ووٹرز کی کل تعداد 2 لاکھ 8 ہزار 1 سو 58 ہے جن میں مردانہ ووٹر کی تعداد 1 لاکھ 21 ہزار 86 اور خواتین ووٹر کی تعداد 87 ہزار 72 ہے۔ حلقہ پی پی 64 کی پولنگ اسکیم کے مطابق اس حلقہ کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ اس حلقہ میں 144 پولنگ اسٹیشن جن میں 401 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں جن میں مردانہ پولنگ بوتھ کی تعداد 215 اور زنانہ پولنگ بوتھ کی تعداد 186 ہو گی اس حلقہ کا ریٹرننگ آفیسر محمد مسعود زمان گوندل سول جج نوشہرہ ورکاں کو مقرر کیا گیا ہے۔ حلقہ پی پی کی نشست پر 17 امیدواروں میں مقابلہ ہو گا جن میں سیاسی پارٹیوں کے 6 امیدوار جن میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے نامزد امیدوار چوہدری عرفان بشیر گوجر سابق ایم پی اے پاکستان تحریک انصاف کے چوہدری خالد پرویز ورک سابق ایم پی اے تحریک لبیک پاکستان کے چوہدری حامد ناصر سیویا ملی مسلم لیگ (اللہ اکبر تحریک) کے چوہدری محمد نواز ملہی متحدہ مجلس عمل کے رانا ظفر اقبال منج پاکستان عوامی راج پارٹی کے رانا محمد عرفان خان شامل ہیں جبکہ 11 آزاد امیدواروں میں چوہدری رفاقت حسین گوجر اور چوہدری محمد کامران اولکھ شامل ہیں ۔ابتک کی صورت حال کے مطابق اصل مقابلہ مسلم لیگ (ن) کے چوہدری عرفان بشیر گوجر سابق ایم پی اے اور پاکستان تحریک انصاف کے چوہدری خالد پرویز ورک سابق ایم پی اے کے درمیان متوقع ہے جبکہ چوہدری محمد کامران اولکھ ایڈووکیٹ اور چوہدری رفاقت حسین گوجر ایڈووکیٹ سابق ایم پی اے بھی اپ سیٹ کر سکتے ہیں اصل صورت ایک ہفتہ تک عیاں ہو جائے گی ۔ جس کے بارے میں حلقے کا سروے جاری ہے جس کے نتائج کا اعلان سروے مکمل ہونے کے بعد کیا جائے گا۔

مزید : علاقائی