چواین اے 74،سیاسی جماعتوں سے ناراض ،بنے اُمیدوار آزاد

چواین اے 74،سیاسی جماعتوں سے ناراض ،بنے اُمیدوار آزاد

نڈہ( خرم شہزادسے) شہر چونڈہ ضلع سیالکوٹ کا ایک تاریخی اور قدیم قصبہ ہے ،اس پرانے حلقہ این اے 114،نئے 74اور صوبائی حلقہ پرانے 126،نئے39کا حصہ ہے،30 یونین کونسل اور 800گاؤں پر مشتمل ہے،الیکشن 2018کے انعقاد کا اعلان ہوتے ہی تمام بڑی سیاسی پارٹیوں نے اپنے اپنے امیدوار میدان میں اُتاردیے ہیں، حلقہ این اے 74 نچلی دوصوبائی سیٹو ں پی پی39اور پی پی 40پرمشتمل ہیں ،سابق وفاقی وزیر قانون زاہد حامد خاں کے بیٹے علی زاہد خاں صدرپاکستان مسلم لیگ (ن )نامز داُمیدوار ہیں ، پاکستان تحریک انصاف نے چوہدری غلام عباس کو ٹکٹ جاری کیا ہے، پاکستان پیپلز پارٹی کی طرف سے نرگس فیض اور تحریک لبیک پاکستان کی طرف سے پیر سید شجاعت حسین شاہ کو پارٹی ٹکٹ جاری کیے گئے ہیں ان کے علاوہ آزاداُمیدوار بھی الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں، این اے 74کے نچلی سیٹوں پر پمیاں محمد نواز شریف کے قریبی ساتھی چےئرمین یونین کونسل چوبارہ مرزا الطاف کو پی پی 39سے ٹکٹ جاری کیا گیا ہے، پاکستان تحریک انصاف نے بیرسٹر منصور سرور کے بیٹے سیف منصور، اور پاکستان سنی تحریک کے نامز د اُمیدوار مہر رضوان ہیں ، سیاسی پارٹیوں کی طرف سے امیدواروں میں ٹکٹوں کی بار بار تبدیلی کی وجہ سے امیدوار، ووٹرز اور سپوٹرز کو کافی مایوسی کا سامنا کرنا پڑا جس کی وجہ سے حلقہ کی سیاسی صورت حال یکسر تبدیل ہو کر رہی گئی ہیں ، سابق وفاقی وزیر زاہد حامد خاں سے اختلافات کی بنیاد پر سابق ایم پی اے رانا لیاقت علی جنہوں نے 2013کے الیکشن میں 50455 ووٹ حاصل کیے ان کے مدمقابل پی پی پی کے اُمیدوارسابق صوبائی وزیر ڈاکٹر تنویر اسلام نے 11380ووٹ حاصل کئے کوٹکٹ جاری نہیں کیا گیا،دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف نے ڈاکٹر تنویر اسلام سے ٹکٹ واپس لے کر بریسٹر منصور سرور کے بیٹے سیف منصور کو جاری کر دیا چونکہ ڈاکٹر تنویر اسلام رانا سیاسی اثرورسوخ رکھنے کی وجہ سے مضبوط اُمیدوار سمجھے جاتے تھے جو اب آزاد حیثیت سے الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں، زاہد حامد خاں نے2013کے 131468ووٹ حاصل کر کے کامیابی حاصل کی تھی اُس وقت ان کے مدمقابل آزاد امیدوار چوہدری غلام عباس نے38232ووٹ حاصل کیے پی ٹی آئی نے بیر سٹر منصور سرور سے ٹکٹ واپس لے کر چوہدری غلام عباس کو دے دی ،لیکن علی زاہد خاں کے مدمقابل پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سابق ایم پی اے منور علی گل جن کو زاہد حامد خاں سے اختلافات کی وجہ سے ٹکٹ جاری نہیں کیا گیا وہ بھی آزاد امید وار کی حیثیت سے الیکشن لڑ رہے ہیں ، ن کی جگہ رانا افضل سابق ایم پی اے کو پی ایم ایل ن کا اُمیدوار نامزدکیاگیاہے جس کا سب سے زیادہ فائدہ پی ٹی آئی کے امیدوار چوہدری غلام عباس کو ہو رہا ہیں،مذہبی جماعت تحریک لبیک پاکستان کے آُمیدوارپیر سید شجاعت حسین شاہ معروف روحانی شخصیت پیر جماعت علی شاہ علی پور شریف کے خاندان سے ہیں۔این اے 74میں ٹوٹل ووٹرز کی تعداد4لاکھ75ہزار866ہے، جن میں مرد ووٹوں کی تعداد2لاکھ7ہزار328اور خواتین ووٹوں کی تعداد2لاکھ7ہزار328ہے،بر حال صوبائی سیٹ پر مقابلہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سابق ایم پی اے رانا لیاقت علی اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے نامزد امیدوار مرزا الطاف کے درمیان اور قومی سیٹ پر پاکستان مسلم لیگ (ن) کے نامزد امیدوار علی زاہد خاں اور پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار چوہدری غلام عباس کے درمیان ہو گا

مزید : علاقائی