بلیک لسٹ قانون پر تحفظات ہیں ، ترامیم ہونی چاہئیں : چیئر مین سینیٹ قائمہ کمیٹی داخلہ

بلیک لسٹ قانون پر تحفظات ہیں ، ترامیم ہونی چاہئیں : چیئر مین سینیٹ قائمہ ...

اسلام آباد(آن لائن)سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے چیئرمین رحمن ملک نے کہا ہے کہ بلیک لسٹ پر قانون سازی ضروری ہے کیونکہ اس پر تحفظات موجود ہیں،مجرم اور ملزم کیلئے ای سی ایل میں ڈالنے کا طریقہ کار ایک جیسا نہیں ہوسکتا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزارت داخلہ نے بلیک لسٹ اور ای سی ایل ، پنجاب پولیس کے اہلکار نے چولستا ن میں بچوں کی ہلاکت اور آئی جی سندھ پولیس نے بلاول بھٹو پر لیاری میں پتھراؤ کے حوالے سے اب تک کی گئی تحقیقات پر بریفنگ دی۔ رحمن ملک نے کہا کہ کسی بھی شخص کو محض کسی بھی ادارے کے کہنے پر بلیک لسٹ نہیں کیا جا سکتا ہے،کسی کوبھی ای سی ایل میں ڈالا جاتا ہے تو اس کو اطلاع دینا وزارت کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہاکہ پاسپورٹ کے قوانین کسی کو بلیک لسٹ میں ڈالنے کیلئے لاگو نہیں کیے جاسکتے،پاسپورٹ قوانین میں ترمیم کرنے کی ضرورت ہے،پاسپورٹ کیساتھ ساتھ قومی شناختی کو بلاک نہ کیا جائے کیونکہ عوام کی مفادات کا تحفظ ہماری ذمہ داری ہے اور سہولت دینا فرض ہے۔انہوں نے کہا کہ صرف ایک شکایت پر کسی کو ای سی ایل میں ڈالنا ناانصافی ہے لہٰذاای سی ایل پر کسی کا نام ڈالنے کا طریقہ کار بالکل واضح ہونا چاہئے۔

رحمن ملک

مزید : علاقائی