کامونکے،بینظیر کی آواز نکالنے والانابینانوجوان توجہ کا مرکز بن گیا

کامونکے،بینظیر کی آواز نکالنے والانابینانوجوان توجہ کا مرکز بن گیا

کامونکے( انتخابی کارواں رپورٹ) 25 جولائی کو ہونیوالے عام انتخابات میں جہاں انسانی دلچسپی کی کم خبریں دیکھنے کو مل رہی ہیں وہاں این اے 83 میں بصارت سے محروم ایک نوجوان ہزاروں افراد کی دلچسپی اور توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے ۔کاکا نامی یہ نابینا سابق وزیر اعظم محترمہ بے نظیر بھٹو کی آواز میں ایسی سیاسی تقریر کرتا ہے جسے سن کر یوں محسوس ہوتا ہے کہ جیسے واقعی بے نظیر بھٹو خطاب کررہی ہیں ۔ لب ولہجہ اور انداز بیان بالکل محترمہ جیسا ہے جبکہ الفاظ کا انتخاب اور موقع محل بھی محترمہ کی طرح کا ہی اپنانا اس نوجوان کا خاصہ ہے ۔گزشتہ روز پاکستان انتخابی کاروان نے جب اس بے بصر نوجوان سے اس حوالے سے دریافت کیا تو کاکا کا کہنا تھا کہ میں محترمہ بے نظیر کا شیدائی تھا اور انکی تقریر بے حد شوق سے سنتا تھا ایک دو مرتبہ انہیں کاپی کرنے کی کوشش کی اور اب میں مرحومہ کی آواز میں تقریر کرسکتا ہوں ۔اس سوال پر کہ آپ بینائی سے محروم ہیں اور آپ نے محترمہ کو دیکھا بھی نہیں کس طرح انکی کاپی کرتے ہیں نوجوان کا جواب تھا کہ میں نے انکی آواز سن کر اپنی آواز ان جیسی کی ہے ۔آج کل انتخابی مہم میں مختلف مقامات پر محترمہ کی یہ تخیلاتی تقریر شہری بڑے شوق سے سنتے ہیں اور جلسوں کی رونق دو بالا ہوتی ہے ۔آنکھیں بند کرکے کاکا کی تقریر سنی جائے تو کوئی شخص یقین نہیں کرسکتا کہ محترمہ کے سوا کوئی اور بول رہا ہے ۔یہ نابینا نوجوان محترمہ کی آواز میں میاں نواز شریف اور انکے اہل خانہ کو دی جانے والی سزا ،موجودہ انتخابی صورتحال اور پیپلزپارٹی کے معاملات پر بڑی خوبصورت گفتگو کرتا ہے ۔

نابینا کاکا

مزید : صفحہ اول